پارلیمانی نہ صدارتی،ملکی مسائل کا حل اسلامی نظام ہے، سراج الحق

 پارلیمانی نہ صدارتی،ملکی مسائل کا حل اسلامی نظام ہے، سراج الحق

  

لاہور (صباح نیوز)امیر جماعت اسلامی سینیٹر سراج الحق نے کہا ہے کہ ہمارے مسائل کا حل صدارتی یا پارلیمانی نظام نہیں اسلامی نظام ہے لیکن آج تک ملک میں ایک دن کیلئے بھی اسلامی نظام کو نہیں آزمایا گیا۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے جامع مسجد منصورہ میں جمعہ کے بڑے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔سینیٹر سراج الحق نے کہا کہملک میں37 سال تک صدارتی اور باقی آدھی مدت کیلئے نام نہاد جمہوری اور پارلیمانی نظام رہا ۔ایوب خان ،جنرل ضیاءالحق اور جنرل مشرف پورے اختیارات کے ساتھ صدر رہے مگر مسائل حل نہیں ہوسکے ،آج جو لوگ صدارتی نظام کے حق میں دلائل دے رہے ہیں وہ قومی تاریخ سے بے بہرہ ہیں ۔انہوں نے کہا کہ جمہوریت کے نام پر بار بار چوروں کا ٹولہ اقتدار پر قابض ہوجاتا ہے جو ایک دوسرے کی کرپشن کو تحفظ دیتے رہے ہیں جبکہ موجودہ حکومت نے بھی اب تک احتساب کے نام پر قوم سے مذاق کیا ہے ۔۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے جامع مسجد منصورہ میں جمعہ کے بڑے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ پاکستان کومدینہ کی طرز کی ریاست بنانے اور قرضوں سے نجات دلا نے کے خواب دکھانے والوں نے عوام کو سخت مایوس کیا ۔انہوں نے کہا کہ رمضان کی آمد آمد ہے اور غریب مہنگائی کے ہاتھوں پریشان ہے ۔انہوں نے مطالبہ کیا کہ حکومت رمضان سے پہلے اشیائے خورد و نوش کی سابقہ قیمتیں بحال کرے ۔

 سراج الحق

مزید :

صفحہ آخر -