بنگلہ دیش میں نوجوان پاکستان لڑکی کے ساتھ جنسی زیادتی، ملزم پکڑاگیا

بنگلہ دیش میں نوجوان پاکستان لڑکی کے ساتھ جنسی زیادتی، ملزم پکڑاگیا
بنگلہ دیش میں نوجوان پاکستان لڑکی کے ساتھ جنسی زیادتی، ملزم پکڑاگیا

  

ڈھاکہ(مانیٹرنگ ڈیسک) بنگلہ دیش میں نوعمر پاکستانی لڑکی کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنانے والے ملزم کو گرفتار کر لیا گیا۔ ڈیلی پاکستان گلوبل کے مطابق یہ واقعہ 16اپریل کو پیش آیا جب 17سالہ پاکستانی لڑکی اپنے انگل کے گھر میں موجود تھی کہ 20سالہ ملزم امین اپنے ایک دوست کے ہمراہ گھر میں گھس آیا اور لڑکی کو اغواءکرکے لے گیا۔ ملزم لڑکی سے محبت کرتا تھا اور اس کے گھر رشتہ بھی بھیج چکا تھا جو لڑکی کی ماں نے مسترد کر دیا۔

رپورٹ کے مطابق ملزمان لڑکی کو خالی عمارت میں لے گئے جہاں امین نے اسے زیادتی کا نشانہ بنایا۔ بعد ازاں ملزمان نے لڑکی کے ہاتھ پاﺅں باندھ کر وہیں چھوڑ دیا۔پولیس نے لڑکی کے اغواءکی رپورٹ درج ہونے کے بعد تلاش شروع کی اور 18اپریل کو اسے اس عمارت سے بازیاب کرانے میں کامیاب ہو گئی۔

لڑکی کی ماں نے پولیس کو درج کرائی گئی رپورٹ میں بتایا کہ ”میں اپنی بیٹی کے ہمراہ یہاں اپنے بھائی سے ملنے آئی تھی۔ اسی دوران ملزم امین نے میری بیٹی کا پیچھا کرنا شروع کر دیا اور اس کا رشتہ بھی بھیج دیا لیکن میں نے انکار کر دیا۔ واقعے سے چند روز قبل اسے اطلاع ملی کہ ہمارے ویزوں کی مدت ختم ہونے والی ہے اور ہم جلد پاکستان واپس چلی جائیں گی جس پر اس نے میری بیٹی کو اغواءکرکے زیادتی کا نشانہ بناڈالا۔ یہ واقعہ بنگلہ دیش کے ضلع کوریگرام میں واقع شہر گوپال پور میں پیش آیا۔ پولیس نے چند روز کی تلاش کے بعد اب ملزم امین کو گرفتار کر لیا ہے۔ دوسرے ملزم کی تلاش تاحال جاری ہے۔واضح رہے کہ اس خاتون اور اس کی بیٹی کا تعلق بنیادی طور پر بنگلہ دیش سے ہی ہے تاہم تقسیم کے بعد سے وہ کراچی میں مقیم ہیں اور پاکستانی شہری ہیں۔ گوپال پور اس خاتون کا آبائی شہر ہے جہاں اس کا میکہ مقیم ہے۔

مزید :

بین الاقوامی -