بھارت،قرنطینہ میں موجود خاتون اجتماعی بداخلاقی کا نشانہ بن گئی

  بھارت،قرنطینہ میں موجود خاتون اجتماعی بداخلاقی کا نشانہ بن گئی

  

نئی دہلی (مانیٹرنگ ڈیسک)بھارتی ریاست راجستھان میں قرنطینہ میں موجود ایک خاتون اجتماعی بداخلاقی کا نشانہ بن گئی۔بھارت جس کا شمار خواتین کے تحفظ کے حوالے سے دنیا کے بدترین ممالک میں ہوتا ہے اب وہاں کورونا جیسی وبا ء میں بھی خواتین محفوظ نہیں ہیں۔ بھارتی میڈیا کے مطابق ایک 40 سے 45 سالہ خاتون گذشتہ ہفتے لاک ڈاؤن کے باعث راجستھان کے علاقے مادھو پور میں پھنس گئی تھی۔جے پور کی رہائشی خاتون نے پناہ کیلئے مقامی پولیس اسٹیشن سے مدد طلب کی تھی، تاہم پولیس نے اسے کورونا کے شبے میں ایک سرکاری سکول میں ایک رات کیلئے عارضی طور پر ٹھہرادیا تھا کیونکہ وہاں کوئی اور قرنطینہ مرکز موجود نہیں تھا۔اس دوران 3 مقامی نوجوانوں نے سکول میں داخل ہو کر خاتون کو اجتماعی بداخلاقی کا نشانہ بنایا، تاہم اب انہیں گرفتار کرلیا گیا ہے اور تمام ملزمان کی عمریں 20 سال کے قریب ہیں۔پولیس کا کہنا ہے کہ متاثرہ خاتون کو ایک قرنطینہ مرکز میں بھیج دیا گیا ہے، جہاں اس کے ٹیسٹ لیے جارہے ہیں۔واضح رہے کہ نیشنل کرائم ریکارڈز بیورو انڈیا کے مطابق بھارت میں اوسطاً ہر 20 منٹ میں ایک خاتون کو زیادتی کا نشانہ بنایا جاتا ہے۔خیال رہے کہ بھارت میں کورونا سے متاثرہ افراد کی تعداد 26 ہزار سے تجاوز کرچکی ہے جن میں سے 826 افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔

بھارت خاتون

مزید :

علاقائی -