لوگار میں فوجی قافلے پر دھاوا،7اہلکار مارے گئے،4اغواء

  لوگار میں فوجی قافلے پر دھاوا،7اہلکار مارے گئے،4اغواء

  

کوہاٹ،کابل(این این آئی) افغانستان میں طالبان جنگجووں کے حملے میں 7 فوجی اہلکار ہلاک ہوگئے جب کہ 4 اہلکاروں کو اغوا کر کے لے گئے۔طالبان نے ذمہ داری قبول کر لی۔ بتایا گیا ہے کہ کی مقامی قیادت نے حملے کی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے دعویٰ کیاہے کہ افغان فوجیوں کو بڑا نقصان اْٹھانا پڑا ہے۔ افغان حکومت کو ملک میں قیام امن کے لیے اسیروں کو جلد از جلد رہا کرنا ہوگا۔افغان میڈیا کے مطابق صوبے لوگار میں شدت پسند جنگجووؤں نے فوجی قافلے پر دھاوا بول دیا، 7 اہلکار موقع پر ہی ہلاک ہوگئے جب کہ 4 اہلکاروں کو اسلحہ اور فوجی گاڑیوں کے ہمراہ اغوا کر کے ساتھ لے گئے۔طالبان کی مقامی قیادت نے حملے کی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے دعویٰ کیا کہ افغان فوجیوں کو بڑا نقصان اْٹھانا پڑا ہے۔ کابل حکومت کو ملک میں قیام امن کے لیے اسیروں کو جلد از جلد رہا کرنا ہوگا۔ایک ہفتے کے دوران صوبے تخار، قندھار، لوگار، سرپل، بلخ اور بدغیث کی چیک پوسٹوں پر طالبان حملوں میں ہلاک ہونے والے افغان سیکیورٹی اہلکاروں کی تعداد 100 سے تجاوز کرگئی ہے۔ جب کہ صرف صوبے بدغیث میں 13 مرتبہ حملہ کیا گیا ہے۔واضح رہے کہ 29 فروری کو افغان طالبان اور امریکا کے درمیان طے پانے والے امن معاہدے کے باوجود تاحال افغانستان میں امن قائم نہیں ہوسکا ہے جس کا ذمہ دار طالبان نے اقتدار کے لیے لڑتے افغان قیادت کو قرار دیا جب کہ صدر اشرف غنی نے اس کی ذمہ داری طالبان پر عائد کی۔

قندوز(شِنہوا)افغانستان کے شمالی قندوز صوبہ میں نامعلوم مسلح افراد نے ایک ہی خاندان کے 7افراد کو ہلاک اور 2دیگر کو زخمی کردیا، یہ بات ایک مقامی عہدیدار نے بتائی ہے۔یہ واقعہ ہفتہ کی صبح ضلع امام صاحب میں پیش آیا جہاں پر مسلح افراد نے ایک گھر میں گھس کر 4 مردوں 2 خواتین اور ایک بچی کو ہلاک کردیا جبکہ 2دیگر افراد زخمی بھی ہوئے ہیں۔یہ بات امام صا حب کی ضلعی پو لیس کے سر برا ہ محبوب اللہ سید ی نے شِنہوا کو بتائی۔عہدیدار نے واضح کیا کہ بڑے پیمانے پر عام لوگوں کو ہلاک کئے جانے کے پیچھے وجوہات ابھی واضح نہیں ہیں۔سیدی نے کہا کہ ضلعی پولیس نے اس واقعے کی تحقیقات شروع کردی ہیں۔اس صوبہ میں اسی طرح کے واقعات پیش آتے رہتے ہیں جو کہ ملک کے دارالحکومت سے تقریبا 250 کلومیٹر شمال میں واقع ہے جبکہ مقامی حکام ان جیسے واقعات کا الزام غیر ذ مہ دار مسلح گروپوں کو دیتے ہیں۔

قندوز،فائرنگ

مزید :

صفحہ آخر -