چینی سکینڈل کی فرانزک رپورٹ میں تاخیر ملی بھگت،حکمرانوں کا اعتراف جرم:شہبازشریف

  چینی سکینڈل کی فرانزک رپورٹ میں تاخیر ملی بھگت،حکمرانوں کا اعتراف ...

  

لاہور(سٹاف رپورٹر، مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں) مسلم لیگ (ن) کے صدر اور قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف شہباز شریف نے چینی انکوائری کمیشن کی رپورٹ میں دوہفتے کی تاخیر کو ملی بھگت قرار دے دیا۔چینی انکوائری کمیشن رپورٹ میں تاخیر پر شہباز شریف نے کہا کہ وفاقی کابینہ اور ای سی سی کی سربراہی اور چینی پر سبسڈی کی منظوری دینے والے ذمہ دار ہیں، فیصلوں کے ذمہ دار عمران نیازی اور عثمان بزدار ہیں، حتمی رپورٹ نہ آنا عمران نیازی کا اعترافِ جرم ہے، حتمی رپورٹ میں تاخیر 100 ار ب روپے کے حکومتی ڈاکے کی تصدیق ہے، رپورٹ میں تاخیر چینی ڈکیتی کے اصل ذمہ داروں کو بچانے کی کوشش ہے، رپورٹ چھپانے سے عمران خان کا جرم چھپ نہیں سکتا۔شہباز شریف نے کہا کہ عوام جانتے ہیں کہ ان کے آٹے چینی پر کس نے ڈاکا ڈالا، اب مزید کسی انکوائری اور فارنزک کی ضرورت نہیں، انکوائری کمیشن منصفانہ نہیں کیونکہ کمیٹی کے ارکان ہی انکوائری کمیشن کے رکن بھی ہیں، شاہد خاقان عباسی اور خرم دستگیر کو پیش ہونے کی اجازت دی جائے، ہمارے نامزد کردہ ارکان پیش ہوں گے تو دودھ کا دودھ اور پانی کا پانی ہوجائے گا۔

شہباز شریف

مزید :

صفحہ اول -