صوابی‘ شدید بارشوں اور ژالہ باری سے تمباکو کی فصل تباہ

صوابی‘ شدید بارشوں اور ژالہ باری سے تمباکو کی فصل تباہ

  

صوابی(بیورو رپورٹ)ضلع صوابی میں شدید ترین ژالہ باری، بارش و طوفان سے تمباکو، گندم، سبزیوں اور فروٹ کے باغات کو شدید نقصان پہنچا۔ تمباکو اور گندم کی تیار فصل تباہ ہو گئی تفصیلات کے مطابق گذشتہ شام افطاری کے دوران ضلع بھر میں شدید بارش اور طوفان کا سلسلہ شروع ہو گیا اور ساتھ ہی شدید ترین ژالہ باری بھی شروع ہو گئی جس کے نتیجے میں علاقہ نظرے، باچائی، یعقوبی، متھرہ، سکندرے، بابو بانڈہ، شین خیلہ اور صوابی رزڑ کے دیگر علاقوں میں ژالہ باری سے تمباکو اور گندم کی فصل تباہ ہو کر رہ گئی اسی طرح صوابی کے علاقہ گدون، چھوٹا لاہور، رزڑ اور دیگر علاقوں میں بھی بارش سے فصلوں کو نقصان پہنچا ہے۔ کسان بورڈ ضلع صوابی کے صدر خالد خان، کاشتکار کوارڈینشن کونسل کے صوبائی جنرل سیکرٹری لیاقت یوسفزئی اور سابق ضلع ناظم صوابی و اے این پی کے مرکزی رہنما حاجی محمد زاہد خان نے مرکزی و صوبائی حکومت سے ضلع صوابی کو آفت زدہ قرار دینے اور متاثرہ کاشتکاروں کے ساتھ ہر ممکن مالی مدد کرنے کا مطالبہ کیا انہوں نے کہا کہ حکومت فوری طور پر متاثرہ علاقے کا سروے کر کے کاشتکاروں کو جلد از جلد ریلیف دیا جاے تمباکو مرکزی حکومت کے زیر کنٹرول ہے جب کہ اس فصل سے وفاق کو سالانہ 150ارب روپے آمدن مل رہا ہے۔ زمینداروں اور کاشتکاروں کی دن رات محنت اور سخت مشقت کی دو بڑی فصلیں گندم اور تمباکو جو کہ مکمل طور پر ژالہ باری سے تباہ ہو گئی ہے حکومت ضلع صوابی کو آفت زدہ قرار دے کر کسانوں کو جلد از جلد ہونے والے نقصانات کا ازالہ کرنے کے لئے مالی مدد اور تعاون کیا جائے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -