سعودی عرب اور چین کے درمیان کورونا ٹیسٹ کے لئے 995 ملین ریال کا معاہدہ طے پاگیا

سعودی عرب اور چین کے درمیان کورونا ٹیسٹ کے لئے 995 ملین ریال کا معاہدہ طے پاگیا
سعودی عرب اور چین کے درمیان کورونا ٹیسٹ کے لئے 995 ملین ریال کا معاہدہ طے پاگیا

  

ریاض (وقار نسیم وامق) سعودی عرب نے کورونا وائرس کے 90 لاکھ ٹیسٹ کے لئے چین سے 995 ملین ریال کا معاہدہ کیا ہے، شاہ سلمان بن عبدالعزیز اور ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کے حکم پر یہ معاہدہ کیا گیا ہے، چین اور سعودی عرب کے درمیان معاہدے پر سعودی کمپنی نبکو اور چینی کمپنی بی جی آئی نے دستخط کئے ہیں.

سعودی عرب کی جانب سے وزیرِ صحت ڈاکٹر عبداللہ الربیعہ اور چین کی جانب سے سعودی عرب میں متعین چینی سفیر چینگ وینگ نے دستخط کئے، معاہدے کے مطابق چین کورونا ٹیسٹ کے 500 چینی ماہر اور ٹیکنیشن 6 بڑی ریجنل لیباریٹریاں اور تمام طبی سازوسامان مہیا کرے گا، چینی ماہرین کو مملکت کے تمام علاقوں میں تعینات کیا جائے گا.

چین سے آنے والی لیباریٹریاں سعودی عرب کے ہر صوبے کو فراہم کی جائیں گی، چین سعودی عرب کو ایک موبائل لیباریٹری بھی فراہم کرے گا، جس سے روزانہ 10 ہزار ٹیسٹ کئے جاسکیں گے، چین سعودیوں کو لیباریٹریوں میں کام کرنے اور کورونا ٹیسٹ کی ٹریننگ دے گا، چینی ماہرین وہ فیلڈ ٹیسٹ اور یومیہ ٹیسٹ سمیت تمام امور کی ٹریننگ دیں گے.

چین 8 مہینے تک لیباریٹریوں اور مشینوں کے مؤثر ہونے کی گارنٹی دے گا، چین کو دئیے گئے ٹھیکے کے تحت سعودی عرب میں کورونا کے متعدد نمونوں کے جینیاتی نظام کا تجزیہ بھی چین کے ذمہ ہوگا، علاوہ ازیں مملکت میں دس لاکھ نمونے لے کر مزاحمتی نقشے کا تجزیہ بھی کیا جائے گا تاکہ کورونا کی وبا کے انسداد کے عمل کو منظم بنانے میں ریاستی سکیمیں موثر ثابت ہوسکیں.

سعودی عرب اور چین کے درمیان طے پانے والا معاہدہ کورونا وائرس کے حوالے سے پوری دنیا کا سب سے بڑا معاہدہ ہے، سعودی ٹیسٹنگ کمپنی امریکہ، سوئٹزر لینڈ اور کوریا کی متعدد کمپنیوں سے متعدد ٹیسٹنگ سسٹم خرید چکی ہے، سعودی عرب کا ہدف 14.22 ملین ٹیسٹ کا ہے.

مزید :

عرب دنیا -