دلہن کے باپ نے نئی تاریخ رقم کردی، بیٹی کی شادی کے لیے جمع کی گئی رقم کورونا وائرس کے خلاف جنگ میں عطیہ کردی

دلہن کے باپ نے نئی تاریخ رقم کردی، بیٹی کی شادی کے لیے جمع کی گئی رقم کورونا ...
دلہن کے باپ نے نئی تاریخ رقم کردی، بیٹی کی شادی کے لیے جمع کی گئی رقم کورونا وائرس کے خلاف جنگ میں عطیہ کردی

  

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) پوری دنیا کورونا وائرس کے خلاف جنگ لڑ رہی ہے اور ہر شخص اس جنگ میں اپنا حصہ ڈال رہا ہے۔ جو لوگ کچھ اور نہیں کر سکتے وہ اپنی بساط کے مطابق کورونا وائرس فنڈز میں مالی معاونت کر رہے ہیں۔ ایسے میں بھارت میں ایک شخص نے اپنی بیٹی کی شادی کے لیے جمع کی گئی رقم کورونا وائرس فنڈ میں دے کر نئی مثال قائم کر دی ہے۔ ٹائمز آف انڈیا کے مطابق اس شخص کا نام ویلاس بوکے ہے جو بھارتی ریاست مہاراشٹر کے شہر اودگیر کا رہائشی ہے۔

ویلاس نے اپنی بیٹی گیتانجلی کی شادی کے لیے 51ہزار بھارتی روپے جمع کر رہے تھے۔ گیتانجلی کی شادی کے دن قریب آئے تو کورونا وائرس کی وجہ سے لاک ڈاﺅن ہو گیا جس پر ویلاس نے بیٹی کی شادی ملتوی کرنے کی بجائے ایک انتہائی سادہ تقریب منعقد کرکے اس کے ہاتھ پیلے کرنے اور شادی کے لیے جمع کی گئی رقم کورونا وائرس کے خلاف جنگ میں عطیہ کرنے کا فیصلہ کر لیا۔ 9اپریل کو مقررہ تاریخ پر سادہ سی تقریب میں گیتانجلی اوراس کے دولہا سواپنیل ریڈی کی شادی ہو گئی جس کے بعد ویلاس نے اکیاون ہزار روپے اور راشن کے 125تھیلے مقامی انتظامیہ کے حوالے کر دیئے تاکہ وہ انہیں مستحقین میں تقسیم کر دیں۔ گیتانجلی کی شادی میں خاندان کے چند لوگوں اور ڈپٹی کلیکٹر پروین منگشیتی نے شرکت کی۔ کلیکٹر کا کہنا تھا کہ ”ویلاس اور اس کے خاندان نے ایثار کی عظیم مثال قائم کی ہے۔ مجھے امید ہے کہ اس سے دیگر لوگوں کو بھی ترغیب ملے گی اور وہ اس مشکل وقت میں ضرورت مندوں کی مدد کے لیے آگے آئیں گے۔“

مزید :

ڈیلی بائیٹس -بین الاقوامی -کورونا وائرس -