مسجد اقصیٰ میں نمازی بھی یہودیوں سے محفوظ نہیں،میاں اویس

  مسجد اقصیٰ میں نمازی بھی یہودیوں سے محفوظ نہیں،میاں اویس

  

لاہور(پ ر)  انٹرنیشنل ہیومن رائٹس موومنٹ قصور کے صدر میاں اویس علی نے کہا ہے کہ مسجد اقصیٰ سمیت اس کی چاردیواری کے اندر روزہ داراورنمازی تک اسرائیلی درندوں سے محفوظ نہیں۔مسجد اقصیٰ کے تقدس کی پامالی اورنمازیوں پرتشدد ناقابل برداشت ہے۔صہیونی اوربھارتی درندوں کومسلمانوں کی مذہبی آزادی پرشب خون مارنے کاحق کس نے دیا،کیا اقوام متحدہ کے ضابطہ اخلاق کااطلاق صرف مسلمانوں پرہوتا ہے۔ مسلمانوں کے قبلہ اوّل کے تقدس جبکہ فلسطینیوں کے بنیادی حقوق کی پامالی پرعالمی ضمیرآوازکیوں نہیں اٹھاتا۔مسلم حکمران اپنی مجرمانہ خاموشی اوربزدلی کا روزمحشر اللہ تعالیٰ کوکیاجواب دینگے۔ وہ ایک اجلاس سے خطاب کررہے تھے۔

میاں اویس علی نے مزید کہا کہ فلسطینی عوام کوشاہراہوں پرنماز جمعہ اداکرنے پرمجبورکردیا گیا،اس کے باوجودنمازیوں پربہیمانہ تشددکیا گیا۔ ہزاروں گرفتارفلسطینیوں اورکشمیریوں کوفوری رہاکیاجائے۔انہوں نے کہا کہ اسرائیل اوربھارت کے قیدخانے فلسطینیوں اورکشمیریوں کیلئے عقوبت خانے بنے ہوئے ہیں،جہاں انہیں زندہ درگورکردیاجاتا ہے۔انسانی حقوق کے علمبردار اسرائیل اوربھارت کامحاسبہ کریں کیونکہ ان کی شیطانیت امن وآشتی اورانسانیت کیلئے خطرہ ہے۔انہوں نے کہا کہ فلسطینیوں سے کشمیریوں تک بیگناہ مسلمانوں کاخون بہایاجارہا ہے۔معصوم مسلمانوں کے خون سے ہولی کھیلنے والے درندے آپس میں اتحادی ہیں۔انہوں نے کہا کہ نریندرمودی کے حالیہ دورہ کشمیر کوغیورکشمیریوں نے مسترد کردیا۔اسلام اورمسلمانوں پر حملے کرناکفار کی فطرت ہے،ان کے ساتھ ساتھ بے حس مسلم حکمرانوں کے رویے بھی قابل مذمت ہیں جوظالم کاہاتھ اورظلم کاراستہ نہیں روکتے۔ 

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -