برطانیہ اور یورپ بھر میں   نریندر مودی کے دورہ مقبوضہ جموں و کشمیر پر شدید تنقید

 برطانیہ اور یورپ بھر میں   نریندر مودی کے دورہ مقبوضہ جموں و کشمیر پر شدید ...

  

 مانچسٹر(این این آئی)برطانیہ اور یورپ بھر میں نریندر مودی کے دورہ مقبوضہ جموں و کشمیر پر شدید تنقیدکی گئی۔ بھارتی وزیر اعظم نے بھارت کے بعد مقبوضہ جموں وکشمیر میں بھی ہندوتوا اور آرایس ایس کے پرچار کے لئے مقبوضہ جموں کشمیر کا دورہ کیا۔ریاستی عوام مودی اور بھارتی ناپاک عزائم، ظلم و جبر، انسانی حقوق کی مسلسل خلاف ورزیوں اور تقسیم کی تمام کوششوں کو ناکام بنانے کیلئے سفارتی اور سیاسی محاذ پر اپنی کوششیں جاری رکھیں گے۔ جموں وکشمیر تحریک حق خود ارادیت انٹرنیشنل کے عہدیداروں، معاونین اور خواتین راہنماؤں نے تحریکی سرگرمیوں کا پروگرام جاری کر دیا۔ برطانیہ کے تمام بڑے شہروں، برطانوی پارلیمنٹ، یورپین پارلیمنٹ، جینوا میں قائم اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کی کونسل اور دیگر یورپین ممالک کے دارالحکومتوں میں تحریکی سرگرمیاں تیز کرنے کے لئے لائحہ عمل طے کر لیا گیا۔ جموں وکشمیر تحریک حق خود ارادیت انٹرنیشنل کے اس انتہائی اہمیت کے مشاورتی اجلاس کی صدارت بانی چیئرمین راجہ نجابت حسین نے کی جب کہ اس اجلاس میں سردار عبدالرحمان خان، کونسلر یاسمین ڈار، راجہ غضنفر خالق، ہیری بوٹا، یاسمین عالم، فرزانہ افضل، کونسلر نائلہ شریف، کومل خان، ذیشان عارف، کونسلر محمد الیاس، جاوید طارق، تیمورشفیق، کونسلر شاہینہ ہارون، مشعال عقیل، نورین شہزاد و دیگر نے اپنی شرکت کو یقینی بنایا اور پرامن احتجاج کر کے پوری دنیا کو بتایا کہ وہ بھارت کے تمام اقدامات کو مسترد کر تے ہیں اور پوری ریاست جموں و کشمیر جسے اقوام متحدہ نے اپنی قراردادوں میں تسلیم کر رکھا ہے اس کے تحت کشمیری عوام کے حق خود ارادیت، بنیادی انسانی حقوق کے حصول اور دیگر تمام بنیادی حقوق کے حصول کے لئے عملی جدو جہدجاری رہے گی۔ راجہ نجابت حسین نے کہا کہ تحریک میں موجود تما م خواتین، میری بہنیں، میری بیٹیاں بھرپور جوش اور جذبے کیساتھ مقبوضہ کشمیر کے عوام کی اور بالخصوص مقبوضہ کشمیر کی خواتین کی آواز بنیں گی۔

 مودی پرتنقید

مزید :

صفحہ اول -