تحریک انصاف کا الیکشن کمیشن دفاتر کے باہر احتجاج،چیف الیکشن کمشنر سے استعفے کا مطالبہ

  تحریک انصاف کا الیکشن کمیشن دفاتر کے باہر احتجاج،چیف الیکشن کمشنر سے ...

  

        اسلام آباد،لاہور،کراچی،پشاور،فیصل آباد،جہلم (نمائندہ خصوصی،سپیشل رپورٹر،مانیٹرنگ ڈیسک،نیوزایجنسیاں)پاکستان تحریک انصاف کے ارکان نے ملک بھر کے مختلف شہروں میں الیکشن کمیشن کے دفاتر کے باہر احتجاج اورچیف الیکشن کمشنر سکندر سلطان راجہ کے مبینہ جانبدارانہ رویے کی مذمت کرتے ہوئے عہدے سے مستعفی ہونے کا مطالبہ کیا۔تفصیلات کے مطابق اسلام آباد میں پی ٹی آئی رہنما اور اراکین الیکشن کمیشن کے دفتر کے باہر پہنچے اور احتجاج کیا۔اس موقع پر الیکشن کمیشن کے باہر سیکیورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے تھے، الیکشن کمیشن میں عام افراد کا داخلہ بند کر دیا گیا۔الیکشن کمیشن کے اطراف میں خاردار تاریں لگا دی گئی تھیں اور باہر پولیس کی بھاری نفری بھی تعینات تعینات تھی۔الیکشن کمیشن کے باہر پی ٹی آئی خواتین کارکنان نے نعرے بازی کرتے ہوئے چیف الیکشن کمشنر، استعفیٰ دو کے نعرے لگائے۔احتجاج میں شرکت کیلئے سابق وزیر اطلاعات شیخ رشید، پی ٹی آئی رہنما شبلی فراز اور عامر ڈوگر بھی الیکشن کمیشن کے سامنے پہنچے۔الیکشن کمیشن کے دفتر کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے شیخ رشید احمد نے کہا کہ اگر یہ پاکستان میں امن و امان چاہتے ہیں تو 30مئی سے پہلے انتخابات کا اعلان کردیں ورنہ عمران خان کال دے گا اور ایسی کال ہو گی کہ ساری قوم اسلام آباد ہو گی۔شیخ رشید احمد نے کہا کہ اگر الیکشن نہ ہوئے تو اس کے نتیجے میں جو خونریزی اور تشدد ہو گا، اس کے ذمے دار یہ ہوں گے۔انہوں نے کہا کہ ہماری پوزیشن اتنی اچھی نہیں تھی جتنی ان بیوقفوں کی وجہ سے اچھی ہوئی، چور ڈاکو لٹیرے سعودی عرب جارہے ہیں، ان کو سعودی عرب میں بھی نعروں کا سامنا ہوگا، ان کا کہنا تھا کہ ان سب نے ای سی ایل سے اپنا نام کٹوایا ہے، اب الیکشن کو کوئی نہیں روک سکتاشیخ رشید نے کہا کہ ابھی تو عمران خان نے باضابطہ کال نہیں دی، عمران خان ایسی کال دے گا کہ ساری قوم اسلام آباد ہوگی۔اس موقع پر شبلی فراز نے کہا کہ راستے بند ہونے کے سبب ہمارے ہزاروں کارکن یہاں پہنچ نہیں سکے، سب نے دیکھ لیا کہ لاہور، کراچی، پشاور میں ہمارے جلسے میں لاکھوں لوگوں نے شرکت کی، ہمارا یہاں آنے کا مقصد لوگوں کو بلانا نہیں تھا۔دریں اثنا پی ٹی آئی رہنما فواد چوہدری اور فرخ حبیب نے اسلام آباد میں ای سی پی آفس جانے والے راستے بند کرنے اور کنٹینرز لگانے پر حکومت کو تنقید کا نشانہ بنایا۔فواد چوہدری نے ٹویٹ میں کہا کہ الیکشن کمیشن کے دفاتر کے باہر پورے ملک میں صرف ٹوکن احتجاج ہے اور بیوقوف حکومت پورا ملک ہی بند کر کے بیٹھ گئی ہے۔انہوں نے کہا کہ اسلام آباد کلومیٹرز میں کنٹینر لگا کر بند کر دیا گیا ہے، یہ بوکھلاہٹ کی علامت ہے، جب ہم باقاعدہ تحریک شروع کریں گے تو ان کا کیا بنے گا؟پی ٹی آئی رہنما فرخ حبیب نے کہا کہ پر امن احتجاج ہمارا جمہوری حق ہے لیکن جس طریقہ سے کنٹینرز لگا کر راستے بند کئیے گے اس سے لگتا ہے،موجودہ امپورٹڈ حکومت کی کانپیں ٹانگ رہی ہے۔انہوں نے اپنی ٹوئٹ میں کہا کہ گزشتہ سال اسی الیکشن کمیشن کے باہر پی ڈی ایم نے احتجاج کیا تھا تو ہم نے اجازت اور سیکورٹی سمیت تمام سہولتیں فراہم کی تھی۔عامر ڈوگر نے مظاہرین سے مخاطب ہوتے ہوئے کہا کہ ہمارے ہزاروں کارکنوں کو الیکشن کمیشن کے سامنے احتجاج سے روکا گیا، پاکستان کی پوری قوم عمران خان کے ساتھ کھڑی ہے۔مظاہرے سے قبل کراچی میں ای سی پی آفس کے باہر پولیس تعینات تھی اور سیکیورٹی انتظامات کے تحت 3 موبائل وینز بھی جائے وقوعہ پر موجود تھیں اس حوالے سے گزشتہ روز الیکشن کمیشن نے سیکیورٹی کے لئے چیف سیکریٹری اور آئی جی سندھ کو خط بھی تحریر کیا تھا۔بعد ازاں تحریک انصاف نے الیکشن کمیشن کے باہر اپنا احتجاج ختم کرنے کا اعلان کردیا۔ادھرلاہور میں بھی تحریک انصاف رہنماؤں اور کارکنان نے الیکشن کمیشن کے باہر احتجاج کیا۔اس موقع پر پولیس کی بھاری نفری الیکشن کمیشن کے سامنے تعینات کر دی گئی، الیکشن کمیشن کے باہر رکاوٹیں کھڑی کر دی گئیں، شہریوں کا داخلہ الیکشن کمیشن میں بند کر دیا گیا، ڈپٹی کمشنر لاہور عمر شیر چٹھہ بھی الیکشن کمیشن دفتر پہنچے۔اس موقع پر پی ٹی آئی رہنما میاں محمد الرشید نے الیکشن کمیشن کے باہر خطاب کرتے ہوئے کہا کہ لوٹوں کو ڈی سیٹ کیا جائے، آئندہ انتخابات کی تیاری کریں، الیکشن کمیشن اگر اپنا رویہ درست نہیں کرے گا تو ہر روز مظاہرہ ہو گا، منحرف اراکین کا ریفرنس الیکشن کمیشن کے پاس پڑا ہے اس پر فیصلہ کیا جائے۔ڈاکٹر یاسمین راشد نے مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ الیکشن کمیشن کا جانبدار رویہ ہمیں بالکل قبول نہیں ہے، الیکشن کمیشن ہوش کے ناخن لو، لوٹوں کے کیس کو التوا میں ڈالنے کی ضرورت نہیں، یہ وہ لوگ ہیں جنہوں نے ضمیر، ایمان اور پاکستان بیچا، ان لوٹوں کو فوری طور پر ڈی سیٹ کیا جائے۔اس موقع پر پی ٹی آئی رہنما مسرت جمشید نے اپنے خطاب میں کہا کہ الیکشن کمیشن امریکہ کے ایک ایجنٹ کے طور پر کام کر رہا ہے، دن کی روشنی میں آئین شکنی کی گئی، الیکشن کمیشن ستو پی کر کیوں سویا ہوا ہے، الیکشن کمیشن عوام کے اس رویے کو ہرگز قبول نہیں کریں گے، بعد ازاں الیکشن کمیشن کے باہر تحریک انصاف کا احتجاج ختم ہو گیا کارکنان اور قائدین منشتر ہو گئے۔فواد چوہدری نے ایک ٹوئٹ کے ذریعے جہلم میں بھی الیکشن کمیشن کے خلاف پی ٹی آئی کے احتجاج سے آگاہ کیا۔ایک ٹوئٹ کے ذریعے انہوں نے بتایا کہ ’پورے ملک کی طرح جہلم میں بھی الیکشن کمیشنر کے خلاف احتجاج جاری ہے، عوام لوٹا کریسی اور ضمیر فروشی کی سیاست کو مسترد کرتی ہے۔پی ٹی آئی کے ترجمان صدام کنبھر کے بیان کے مطابق سندھ اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر حلیم عادل شیخ اور فردوس شمیم نقوی، بلال غفار، آفتاب صدیقی، راجہ اظہر اور سیف الرحمان سمیت پارٹی کے دیگر رہنما مظاہرین میں شامل تھے۔احتجاج میں شرکا نیالیکشن کمیشن کے خلاف نعرے بازی کی۔اپوزیشن لیڈر سندھ اسمبلی حلیم عادل شیخ کا الیکشن کمیشن کے باہر خطاب احتجاجی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہم بے شرموں کو شرم دلانے آئے ہیں، آپ الیکشن کمیشن ہیں آپ الیکشن کمیشن کب سے بن گئے، آپ الیکشن کمیشن ہیں آپ کرپشن کمیشن کب سے بن گئے ہیں۔انہوں نے کہا کہ آپ جس کے داماد ہوں بحیثیت داماد ان کی خدمت نہ کرو، یہ سیاہ دن چل رہے ہیں۔انہوں نے کہاکہ الیکشن کمیشن لوٹوں کا سرپرست ہے، جنہوں نے اپنا ضمیر بیچا، پنجاب والے نے ریفرنس بھیج دیا ہے۔احتجاج کے دوران پی ٹی آئی کے کارکنوں نے الیکشن کمیشن کے اندر داخل ہونے کی کوشش کی، اس دوران مظاہرین کے درمیان شدید دھکم پیل ہوئی۔حسان خاور نے کہا ہے کہ حالات کا تقاضہ یہی ہے کہ چیف الیکشن کمشنر فوری طور پر مستعفی ہوں۔ تحریک انصاف اسلام آباد ریجن کے صدر علی نواز اعوان نے کہا ہے کہ قوم نے فیصلہ سنا دیا کہ جانبداراور متعصب چیف الیکشن کمشنر فورا استعفی دے الیکشن کمیشن کی جانبداری کھل کر سامنے آچکی ہے مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ سندھ ہاؤس اور پنجاب میں ہونے والے ضمیروں کے سودے الیکشن کمیشن کو نظر نہیں آتے سابق وزیر اعظم یوسف رضا گیلانی کا بیٹا پیسے دے کر سینٹ الیکشن کے لئے لوٹے خریدتا نظر نہیں آیا اور پی ٹی آئی کی فار ن فنڈنگ نظر آگئی انہوں نے کہا کہ پوری قوم کا مطالبہ ہے کہ نئے الیکشنز نیا الیکشن کمیشن کروائے، اس موقع علی نواز اعوان نے کارکنان کو امپورٹڈ حکومت کی طرف سے لگائے گئے بیرئیرز ہٹانے سے روک دیا اور کہا کہ ہمارے لیے یہ رکاوٹیں نئی بات نہیں ہم جانتے ہیں کہ رکاوٹیں کیسے توڑنی ہیں بہتر ہو گا۔

پی ٹی آئی احتجاج

 پشاور(نیوزایجنسیاں)چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے کہا ہے کہ چیف الیکشن کمشنر (ن) لیگ کا ایجنٹ ہے،کسی صورت امپورٹڈ حکومت کو منظور نہیں کریں گے،بیرونی سازش کے تحت ہمارے ملک پر امپورٹڈ حکومت مسلط کی گئی، کابینہ کے 60فیصد ارکان ضمانت پر ہیں، آصف زرداری، نواز اور شہباز شریف ملک کے سب سے بڑے ڈاکو ہیں،ہم ایک آزاد ملک ہیں، اللہ کے علاوہ کسی کے آگے نہیں جھکیں گے۔پشاور میں تحریک انصاف کے کارکنوں سے خطاب کے دوران سابق وزیر اعظم نے کہا کہ ڈاکوں کو بتانا چاہتے ہیں کہ کسی صورت امپورٹڈ حکومت کو منظور نہیں کریں گے۔ سابق وزیر اعظم نے کہا کہ حقیقی آزادی کی تحریک کے لئے کارکنوں کو پوری قوم کو تیار کرنا ہے، پاکستان کی تاریخ میں یہ فیصلہ کن وقت ہے، بیرونی سازش کے تحت ہمارے ملک پر امپورٹڈ حکومت مسلط کی گئی۔ عمران خان نے کہا کہ کابینہ کے 60 فیصد ارکان ضمانت پر ہیں، آصف زرداری، نواز اور شہباز شریف ملک کے سب سے بڑے ڈاکو ہیں، وہ ملک سے پیسہ چوری کرکے بیرون ملک لے گئے، یہ لوگ پاکستان آتے ہیں لوٹنے ہیں اور پھر باہر لے جاتے ہیں۔ سابق وزیر اعظم نے کہا کہ 1947 کے بعد سب سے اہم فیصلہ کن وقت آج ہے کہ ہم پورہی قوم حقیقی جمہوریت کو بچانے کے لیے ان کا مقابلہ کرے۔ ڈاکوں کو بتانا چاہتے ہیں کہ کسی صورت امپورٹڈ حکومت کو منظور نہیں کریں گے، ہم ایک آزاد ملک ہیں، اللہ کے علاوہ کسی کے آگے نہیں جھکیں گے۔ عمران خان نے کہا کہ خیبر پختونخوا سے ایک ہی رکن اسمبلی منحرف ہوا۔ میں انتظار کررہا ہوں کہ نور عالم اپنے حلقے میں آئے اور لوگوں سے ووٹ مانگے۔ پاکستان جہاں جہاں لوٹے ووٹ مانگنے جائیں گے تو ان کے ساتھ عوام بہت برا کرے گی۔

عمران خان

مزید :

صفحہ اول -