پی پی، (ن) لیگ کی فارن فنڈنگ سے متعلق سکروٹنی کمیٹی اپنا کام کر رہی ہے،الیکشن کمیشن

  پی پی، (ن) لیگ کی فارن فنڈنگ سے متعلق سکروٹنی کمیٹی اپنا کام کر رہی ...

  

  اسلام آباد(سٹاف رپورٹر) الیکشن کمیشن نے   فارن فنڈنگ کیس کی سماعت میں تاخیر کے حوالے سے بیانات کی سختی سے تردید کرتے ہوئے کہا ہے کہ الیکشن کمیشن میں پاکستان پیپلزپارٹی، پی پی پی پی، پی ٹی آئی اور مسلم لیگ(ن) کی  فارن فنڈنگ سے متعلق جو درخواستیں موصول ہوئیں ان پر سکروٹنی کمیٹی اپنا کام کر رہی ہے،سکروٹنی کمیٹی نے پی ٹی آئی سے متعلق فنڈنگ کیس کی رپورٹ دسمبر  میں الیکشن کمیشن کو جمع کروائی جس کو الیکشن کمیشن کے سامنے باقاعدہ سماعت کے لئے مقرر کیا گیا جو کہ اب اختتامی مراحل میں ہے  ،کمیشن نے 29,28,27اپریل 2022 کو  پی ٹی آئی کے وکیل کے فائنل دلائل کے لئے سماعت مقررکی ہے، اسی طرح  پاکستان پیپلزپارٹی، پی پی پی پی ور مسلم لیگ(ن)کے کیسز پر کاروائی کے لئے سکروٹنی کمیٹی نے  9مئی 2022کی تاریخ مقرر کی ہے اور پارٹیوں سے ضروری ریکارڈ طلب کیا گیا ہے،،تمام فارن فنڈنگ کیسوں کی سماعت اور کاروائی میں تاخیر پارٹیوں کی طرف سے مختلف وجوہات کی بنا  پر التوا کی وجہ سے ہوتی رہی ہے،الیکشن کمیشن ایک آئینی ادارہ ہے جو مکمل غیر جانبداری کے ساتھ اپنی آئینی  اور قانونی ذمہ داریاں سر انجام دے رہا ہے اور ملک کے بہترین مفاد میں اور بغیر کسی دباؤ یا ترغیب کے آئندہ  بھی ایسا کرتا رہے گا۔ منگل کو الیکشن کمیشن کی جانب  سے جاری کردہ اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ الیکشن کمیشن ایک آئینی ادارہ ہے جو مکمل غیر جانبداری کے ساتھ اپنی آئینی  اور قانونی ذمہ داریاں سر انجام دے رہا ہے اور ملک کے بہترین مفاد میں اور بغیر کسی دباؤ یا ترغیب کے آئندہ  بھی ایسا کرتا رہے گا۔  قومی اسمبلی کے  20 ممبران  کے خلاف اسپیکر نیشنل اسمبلی نے آرٹیکل  63 (اے)کے تحت  ڈیکلیئریشنز 14اپریل  2022کو چیف الیکشن کمشنر کو بھجوائے جن پر الیکشن کمیشن میں سماعت 28 اپریل کو ہو گی۔ صوبائی اسمبلی کے 26ممبران کے خلاف اسپیکر پنجاب اسمبلی نے آرٹیکل  63(اے)کے تحت   ڈیکلیئریشنز 20 اپریل 2022کو چیف الیکشن کمشنر کو بھجوائے  ان تمام ممبران کو  6مئی 2022کے لئے نوٹسز جاری کر دیئے گئے ہیں۔ مزیدبرآں متعلقہ سیاسی پارٹی کو بھی نوٹس جاری کئے گئے ہیں۔ یہ واضح کیا جاتا ہے کہ آرٹیکل 63 (اے)کے تحت الیکشن کمیشن  ڈیکلیئریشنزموصول ہونے کے 30دن کے اندر ان پر فیصلہ کرنے کا مجاز ہے،فارن فنڈنگ کیس کی سماعت میں تاخیر کے حوالے سے بعض حلقوں سے جو غیر ذمہ دارانہ بیان دیئے جا رہے ہیں ان کی سختی سے تردید کی جاتی ہے۔ الیکشن کمیشن میں پاکستان پیپلزپارٹی، پی پی پی پی، پی ٹی آئی اور مسلم لیگ(ن) کی  فارن فنڈنگ سے متعلق جو درخواستیں موصول ہوئیں ان پر سکروٹنی کمیٹی اپنا کام کر رہی ہے، سکروٹنی کمیٹی نے پی ٹی آئی سے متعلق فنڈنگ کیس کی رپورٹ دسمبر  میں الیکشن کمیشن کو جمع کروائی جس کو الیکشن کمیشن کے سامنے باقاعدہ سماعت کے لئے مقرر کیا گیا جو کہ اب اختتامی مراحل میں ہے   اورجواب دہندہ کے فائنل   دلائل جاری ہیں۔ کمیشن نے 29,28,27اپریل 2022 کو  پی ٹی آئی کے وکیل کے فائنل دلائل کے لئے سماعت مقررکی ہے۔ اسی طرح  پاکستان پیپلزپارٹی، پی پی پی پی ور مسلم لیگ(ن)کے کیسز پر کاروائی کے لئے سکروٹنی کمیٹی نے  9 مئی 2022کی تاریخ مقرر کی ہے اور پارٹیوں سے ضروری ریکارڈ طلب کیا گیا ہے۔ ا

مزید :

صفحہ اول -