فارن فنڈنگ کیس،پی ٹی آئی متوقع فیصلے پر بوکھلاہٹ کا شکار

  فارن فنڈنگ کیس،پی ٹی آئی متوقع فیصلے پر بوکھلاہٹ کا شکار

  

       پشاور(سٹی رپورٹر) پاکستان پیپلزپارٹی خواتین ونگ خیبرپختونخواکی صوبائی صدر سینیٹرروبینہ خالد نے کہاہے کہ پی ٹی آئی فارن فنڈنگ کیس میں اپنے خلاف متوقع فیصلے پر بوکھلاہٹ کا شکار ہے،پی ٹی آئی قیادت جانتی ہے فارن فنڈنگ کیس میں وہ پھنس چکے ہیں، ملکی اداروں پر بہتان تراشی پی ٹی آئی کا وطیرہ بن گئی ہے۔۔انہوں نے سابقہ حکومت کے کرپشن پرتبصرہ کرتے ہوئے کہاکہ توشہ خانہ،سڑک کی تعمیر اور ہیلی کاپٹراستعمال میں قوم کاپیسہ ضائع کرنیوالے عمران خان کی دیکھادیکھی وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا محمودخان اور سابق سپیکراسدقیصر نے نوکریاں فروخت کرتے رہے خیبرپختونخوا میں کرپشن عام ہے اور ہر کام میں کمیشن لیا جاتا ہے انہوں نے کہاکہ ہم افواج پاکستان، عدلیہ، الیکشن کمیشن اور تمام اداروں کے ساتھ ہیں، تحریک انصاف کے رہنما ملکی اداروں پر ہرزہ سرائی سے باز رہیں۔عمران خان اپنے حامیوں کو اکسا رہے ہیں لیکن پاکستان کواس وقت استحکام کی ضرورت ہے۔انہوں نے کہا کہ اداروں پر عدم اعتماد اور بلیک میل کرناعمران خان کی پرانی عادت ہے، قومی سلامتی کمیٹی کے دونوں اجلاسوں میں سازش کاذکر نہیں ہوا، یہ عالمی سازش تھی تو عمران خان نے اقتداربچانے کی خاطر زرداری سے کیوں رابطہ کیا؟انہوں نے مزید کہا کہ موجودہ حکومت کو کم وقت میں بہت سے چیلنجز سے نمٹنا ہے، سابق حکومت نے پاکستان کو آئی ایم ایف کی بہت سخت شرائط میں پھنسا دیا ہے عمران نے اپنی وزیراعظم کی کرسی اور حکومت کو بچانے کے لئے ہر چیز پر بلاجوازسبسڈی دیکر ملک کو کنگال کردیا ہے نئے انتخابات کیلئے پہلے انتخابی اصلاحات اور سابقہ حکومت کی غلطیاں درست کرنا ضروری ہے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -