سندھ ہائیکورٹ میں پسند کی شادی کا ایک اور کیس سامنے آگیا

  سندھ ہائیکورٹ میں پسند کی شادی کا ایک اور کیس سامنے آگیا

  

کراچی (سٹاف رپورٹر) میر پور برڑو جیکب آباد کی لڑکی عزت نے عرفان نامی لڑکے سے کراچی میں کورٹ میرج کرلی۔تفصیلات کے مطابق سندھ ہائیکورٹ میں پسند کی شادی کا ایک اور کیس سامنے آگیا، میر پور برڑو جیکب آباد کی لڑکی عزت نے عرفان نامی لڑکے سے کراچی میں کورٹ میرج کرلی۔لڑکی والدین کی جانب سے دائر مقدمہ ختم کرانے کے لیے سندھ ہائیکورٹ پہنچ گئی، عدالت میں عزت نے بیان دیتے ہوئے کہا کہ میں نے عرفان سے اپنی مرضی سے پسند کی شادی کی ہے، مجھے کسی نے اغوا نہیں کیا۔سرکاری وکیل نے عدالت کو بتایا کہ لڑکی عمر بظاہر 18 سال سے کم ہے، جس پر جسٹس محمد اقبال کلہوڑو کا کہنا تھا کہ لڑکی کے والدین نے اغوا کا مقدمہ درج کرایا تھا، لڑکی کہہ رہی ہے اسے کسی نے اغوا نہیں کیا۔عدالت کا کہنا تھا کہ اگر والدین کو عمر کی حد پر اعتراض ہے تو الگ سے کیس دائر کریں، لاہور ہائیکورٹ نے بھی قرار دیا ہے لڑکی اگر بالغ ہے تو اپنی مرضی سے شادی کرسکتی ہے۔عدالت نے تفتیشی افسر کو ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ لڑکی کا بیان ریکارڈ کرکے شوہر کے ساتھ جانے دیا جائے۔

مزید :

صفحہ اول -