جمشید انصاری کو مداحوں سے بچھڑے 13برس بیت گئے

جمشید انصاری کو مداحوں سے بچھڑے 13برس بیت گئے

  

لاہور(فلم رپورٹر)پاکستان ٹیلی ویژن کے ورسٹائل اداکار جمشید انصاری کو دنیا سے رخصت ہوئے 13برس بیت چکے ہیں، تاہم وہ آج بھی اپنے مداحوں کے دِلوں میں زندہ ہیں۔ ہندوستان کی ریاست اتر پردیش کے شہر سہارن پور میں 31دسمبر1945 کو جنم لینے والے جمشید انصاری 6برس کی عمر میں اپنے والدین کے ہمراہ کراچی آئے ، جہاں سے گریجویشن کے بعد جمشید لندن چلے گئے۔ لندن میں رہائش کے دوران جمشید نے کچھ عرصہ بی بی سی میں کام کیا اور ٹی وی پروڈکشن کے سرٹیفکٹ کورس بھی کئے۔ لندن میں قیام کے دوران انہوں نے شوکت تھانوی کے لکھے ہوئے ڈرامے ’سنتا نہیں ہوں بات‘ پیش کیا۔ 1968میں واپس پاکستان لوٹنے پر پی ٹی وی میں کام شروع کیا، جہاں سے انہوں نے اپنے فنی کیرئیر کا باقاعدہ آغاز ڈرامہ ’’جھروکے‘‘ سے کیا۔ اس عظیم اداکار نے تقریباً 200ٹی وی ڈراموں میں اداکاری کے جوہر دکھائے۔ ان کا فنی کیریئر 40برسوں پر محیط ہے۔ 2005میں برین ٹیومر کی تشخیص کے بعد اس مرض نے اِس تیزی سے اپنے پنجے جکڑے کہ جمشید انصاری کی بصارت جاتی رہی اور اس بے مثال اداکار نے ہمیشہ کے لئے اس دنیا سے منہ موڑ لیا۔

مزید :

کلچر -