شناختی کارڈ کا تقاضا: 18سالہ لڑکی ویل چیئر پر دم توڑ گئی

شناختی کارڈ کا تقاضا: 18سالہ لڑکی ویل چیئر پر دم توڑ گئی
شناختی کارڈ کا تقاضا: 18سالہ لڑکی ویل چیئر پر دم توڑ گئی

  

پاکپتن(ڈیلی پاکستان آن لائن) اٹھارہ سالہ لڑکی ویل چئیر پر تڑپتی رہی، جب کہ ہسپتال انتظامیہ پرچی اور شناختی کارڈ کا تقاضا کرتی رہی، دل کی مریضہ کا علاج ایک گھنٹے بعد شروع کیا گیا جس کے باعث وہ دم توڑ گئی۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق پاکپتن کے سرکاری ہسپتال میں اٹھارہ سالہ مریضہ علاج کر وانے کے لیے ہسپتال میں آئی جہاں اس کو ویل چئیر حاصل کر نے کے لیے کا فی دشواری کا سامنا کر نا پڑا اور انتظامیہ نے علاج کے لیے شناختی کارڈ اور پرچی کا تقاضا کیا جس سے علاج میں دیر ہونے کی وجہ سے لڑکی کی موت ہو گئی۔

مزید :

جرم و انصاف -