سوی ڈن کا نظام حکومت تین سطحوں ، قومی ریجنل اور لوکل پر مشتمل

سوی ڈن کا نظام حکومت تین سطحوں ، قومی ریجنل اور لوکل پر مشتمل

  

لاہور (چودھری عاصم ٹیپو ) سویڈن ایک خوشحال ملک ہے جس کے نظام حکومت میں دولت کی تقسیم اور جامع ترقی کیلئے ایک واضح حکمت عملی ہے۔ جس کا مقصد شہریوں کی خودمختاری اور آزادی کی حفاظت کرتے ہوئے سب کے فائدہ کیلئے خوشحالی میں اضافہ کرنا ہے۔ سویڈن میں نظام حکومت تین سطحوں پر مشتمل ہے۔ نیشنل ،ریجنل اور لوکل ۔اس کے علاوہ ایک یورپی سطح کا بھی نظام ہے جوکہ 1995ء میں سویڈن کے یورپ میں شمولیت کے بعد سے مقبول ہواہے ۔قومی سطح (نیشنل لیول )کے نظام حکومت کے پاس قانون سازی اور اداروں کو چلانے کے اختیارات ہوتے ہیں۔سویڈیش پارلیمنٹ کو ’’رکس ڈیگ(ضابطہ اخلاق)‘‘کہتے ہیں،جس کے پاس قانون سازی کے اختیارات ہوتے ہیں ،اسکی طرف سے کئے گئے فیصلوں پر گورنمنٹ عملدرآمد کراتی ہے ۔حکومتی ڈھانچہ چندوزراء ،400سے زائد سرکاری ایجنسیوں اور عوامی نمائندوں پر مشتمل ہوتا ہے۔ریجنل سطح کے نظام حکومت میں سویڈن 21کاؤنٹیز (اضلاع )میں منقسم ہے ۔جس میں تمام اختیارات کاؤنٹی کونسل کے پاس ہوتے ہیں جس کے نمائندے براہ راست عوام اور کاؤنٹی کے انتظامی بورڈ سے چنے جاتے ہیں ۔جن کے پاس صحت اور ٹیکس وصولی کی ذمہ داری ہوتی ہے۔ لوکل نظام حکومت میں سویڈن کے اندر 290میونسپل کارپوریشنز ہیں جن میں ہر ایک کی ایک منتخب اسمبلی ہے جواسکے تمام فیصلے کرتی اور ان پر عملدرآمد بھی کرواتی ہے ،تعلیم، ٹرانسپورٹ، ہاؤسنگ، واٹر سپلائی، پبلک ویلفیئر سمیت دیگر تمام اختیارات لوکل گورنمنٹ کے پاس ہوتے ہیں۔ کسی بھی پارٹی کو پارلیمنٹ تک رسائی کیلئے مجموعی ووٹوں کا چار فیصد ووٹ لینا ضروری ہوتاہے۔1995ء میں جب سویڈن یورپ میں شامل ہواتب ایک اور نظام جوکہ اوور آل اپنایا گیا وہ یورپی نظام ہے،یورپی نظام کاحصہ ہونے کے وجہ سے سویڈن نئے بننے والے کامن رولز کی ڈرافٹنگ سمیت انکی منظوری میں بھی شامل ہوتاہے ۔یورپین منسٹر کونسل (یورپ کی فیصلہ ساز انتظامی باڈی )میں سویڈن کی نمائندگی سویڈش گورنمنٹ کے ذریعے ہوتی ہے ۔

سویڈیش نظام حکومت

مزید :

صفحہ اول -