عالمی ادارے ہالینڈ میں گستاخانہ خاکوں کے مقابلے رکوانے کیلئے کردارادا کریں ، فضل الرحمٰن

عالمی ادارے ہالینڈ میں گستاخانہ خاکوں کے مقابلے رکوانے کیلئے کردارادا کریں ...

  

لاہور ،سکھر(این این آئی،آن لائن) جمعیت علماء اسلام (ف)ّ کی مر کزی مجلس عاملہ کا اجلاس جے یو آئی کے سر براہ مولانا فضل الرحمن کی صدارت میں دوسرے روز بھی جا ری رہا اجلاس سے خطا ب کرتے ہوئے مولانا فضل الرحمن نے مجلس عاملہ کو ملکی اور بین الا اقوامی صورتحال پر بریفنگ دی اور جبکہ اے پی سی کے اجلاسوں کے حوالے سے بھی آگاہ کیا۔ مولانا فضل الرحمن نے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ یو این او اور عالمی اداروں سے کہاکہ وہ اپنی سابقہ روایات کوتر ک کرتے ہوئے مسلمانوں کے جذبات سے کھیلنے والے ہالینڈ میں گستاخانہ خاکوں کی اشاعت کو رکوانے کے لیئے عملی طور پر اپنا کردار ادا کرے۔ مرکزی میڈیا آفس کے مطابق اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مولانا محمد امجد خان نے اجلاس کے فیصلوں سے آگاہ کرتے ہوئے بتا یا کہ جے یو آئی جمعہ 31اگست کو اور 7ستمبر کو گستاخانہ خاکوں کیخلاف ملک بھر میں یوم احتجاج کے طور پر منائے گی مجلس عاملہ نے فیصلہ کیا ہے کہ جے یو آئی کی رکنیت سازی کا آغاز یکم محرم سے ملک بھر کیا جائے گا مجلس عاملہ نے مولانا راشد خالد محمود سومرو کو مرکزی ناظم انتخاب مقرر کیا ہے مرکزی مجلس عاملہ نے کہاکہ ملک بھر میں علماء کنونشن منعقد کیئے جا ئیں گے مجلس عاملہ نے فیصلہ کیا کہ 9ستمبر کو لاہور میں ہالینڈ میں چھپنے والے گستاخانہ خاکوں کے خلاف عظیم الشان ریلی سے جے یو آئی کے سر براہ مولانا فضل الرحمن خطاب کریں جبکہ 4اکتوبر کولاہور میں مولانا فضل الرحمن مولانا سید امین گیلانی سمینار سے خطاب کریں گے 25ستمبر کو لاڑکانہ میں شہید اسلام علامہ ڈاکٹر خالد محمود سومرو کانفرنس ہوگی اجلاس نے بتایا کہ 6اکتوبر کو بھاولپور 9اکتوبر کو کراچی 11اکتوبرکو بنوں میں علماء کنوشن سے مولانا فضل الرحمن خطاب کریں گے جبکہ 18اکتوبر کو کوئٹہ میں مولانا مفتی محمود ؒ کانفرنس سے خطاب کریں گے اجلاس نے یہ بھی فیصلہ کیا کہ26اکتوبر کو لاہور میں مر کزی مجلس شور ی کا اجلاس منعقد ہو گا جبکہ27.28.29اکتوبر کو لاہور ہی میں مرکزی جنرل کو نسل کا اجلاس ہو گا ۔دریں اثناء مولانا فضل الرحمن نے گزشتہ روز اپنے آبائی گاؤں عبدالخیل میں جے یو آئی سندھ کے ایڈیشنل انفارمیشن سیکرٹری مولانا عبدالحق مہر ، مولانا محمد سلیمان مہر کی قیادت میں ملاقات کرنے والے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ 25جولائی کے الیکشن میں بدترین دھاندلی کر کے عوام کے مینڈینٹ پر ڈاکہ ڈالا گیا ہے جس کو تمام جماعتیں مسترد کر چکی ہیں دھاندلیوں اور ہارس ٹریڈنگ کے بنیاد پر قائم کی گئی پی ٹی آئی کی حکومت زیادہ دیر چل نہیں سکتی عمران خان مشرف کے سیاسی روڈ میپ پر چل پڑے ہیں امریکہ اور انڈیا کو خوش کرنے کیلئے پاکستان اور کشمیر کے مفادات کو پس و پشت ڈال دیا ہے ہم اس پر خاموش رہ نہیں سکتے۔انہوں نے مزید کہا کہ ہم نے جمہوریت کیلئے قربانیاں دی ہیں ہم جمہوریت کو یر غمال ہونے نہیں دینگے سیاسی جمہوری قوتوں کو میدان میں نکلنا ہوگا انہوں نے مزید کہا کہ عمران خان کے ابتدائی اقدامات تبدیلی کے بجائے تنزلی کی طرف جا رہے ہیں عوام اس جعلی تبدیلی کا نعرہ مذاق بن گیا ہے ، پی ٹی آئی کی 22سالہ جدوجہد گالم گلوچ کے علاوہ کچھ بھی نہیں جعلی مینڈینٹ کے بنیاد پر کھڑی کی گئی پی ٹی آئی کی حکومت کے اقدامات جلد زمین بوس ہونے والے ہیں آج انہیں نواب زادہ نصر اللہ خان اور محترمہ بے نظیر بھٹو کی کمی محسوس ہو رہی ہے مگر ہم جمہوریت اور عوام کے حقوق کے حصول کی جنگ لڑینگے بعد ازیں واپسی پرجے یو آئی کے وفد مفتی محمودکے مزار پر حاضری بھری اور ان کے روح کے ایصال ثواب کیلئے فاتحہ خوانی کی ۔

مولانا فضل الرحمن

مزید :

صفحہ آخر -