بہت سے فیصلے الیکشن سے قبل ہی ہوچکے تھے، آج بھی اقتدار پر پرانے چہرے قابض ہیں ، سراج الحق

بہت سے فیصلے الیکشن سے قبل ہی ہوچکے تھے، آج بھی اقتدار پر پرانے چہرے قابض ہیں ...

  

لاہور(این این آئی) امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہاہے کہ آنے والے چھ ماہ میں سارا گردو غبار بیٹھ جائے گا اور دودھ کا دودھ اور پانی کا پانی ہو جائے گا ، الیکشن کیسا اور کن حالات میں ہوا ، ساری دنیا جانتی ہے ، بہت سے فیصلے الیکشن سے پہلے ہی ہوچکے تھے، جو لوگ مشرف ، زرداری اور نوازشریف کے ساتھ تھے ، وہی موجودہ نظام کا حصہ ہیں ،ہم ان کو وقت دینا چاہتے ہیں تاکہ عوام ان کی کارکردگی دیکھ لیں ،اس وقت جب پوری دنیا کی معیشت ، سیاست اور نظام تعلیم عالمی اداروں اور عالمی اسٹیبلشمنٹ کے زیر اثر ہے ، ہم نے حق کا پرچم بلند کیا ہے ، ہم نے الیکشن ہارا مگر اپنے ایمان کا سودا نہیں کیا۔ ہم نے الیکشن میں لوگوں کو اسلامی نظام کی طرف بلایا ، اپنے ضمیر اور نظریے کو مصلحتوں کا شکار نہیں ہونے دیا ، جب چاروں طرف باطل کے اندھیرے تھے ، سید مودودی ؒ کی تحریک پر چند افراد نے حق کا چراغ روشن کیا اور اور آج سید مودودی کی یہ تحریک پوری دنیا میں اپنا ایک اثر رکھتی ہے ، ہمارا پہلے دن سے ایک ہی بیانیہ ہے کہ ملک و قوم کے مسائل کا حل اللہ کے عطا کردہ نظام میں ہے ۔ ان خیالات کااظہار انہوں نے جماعت اسلامی کے 77 ویں یوم تاسیس کے حوالے سے جماعت اسلامی لاہور کے زیراہتمام مقامی ہوٹل میں منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ تقریب سے نائب امیر جماعت اسلامی ڈاکٹر فرید احمد پراچہ ، احمد بلال محبوب اور ذکر اللہ مجاہد نے بھی خطاب کیا ۔ اس موقع پر ڈپٹی سیکرٹری جنرل جماعت اسلامی پاکستان محمد اصغر اور سیکرٹری اطلاعات قیصر شریف بھی موجود تھے ۔سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ دنیا بھر میں اسلامی تحریک کے قدم آگے بڑھے ہیں ۔ عالمی استعمار جمہوری طریقے سے بھی اسلامی تحریکوں کو اقتدار میں آنے کا موقع نہیں دینا چاہتاجس کی واضح مثالیں ڈاکٹر مرسی کی حکومت کا خاتمہ اور فلسطین میں حماس کی انتخابات میں کامیابی تسلیم نہ کرنا ہے اس کے باوجود ہم اقتدار تک پہنچنے کے لیے کسی غیر جمہوری طریقے اور زیر زمین سرگرمی کے قائل نہیں ۔ ہمارے نزدیک اسلامی نظام کے لیے پرامن راستے کے علاوہ کوئی دوسرا راستہ نہیں ۔سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ حضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم ہمارے لیے اپنی جان ، مال ، اولاداور عزت ، ہر چیز سے بڑھ کر عزیز ہیں ۔ ہم ان کی شان میں گستاخی کسی صورت برداشت نہیں کر سکتے ۔ ہالینڈ کے سفیر کو بلانا اور احتجاج کرنا کافی نہیں اسے فوری طور پر نکالا جائے ۔ انہوں نے مطالبہ کیاکہ فوری طور پر او آئی سی کا اجلاس بلایا جائے اور 57 اسلامی ممالک ایسے واقعات کو روکنے کے لیے مشترکہ لائحہ عمل تیار کریں ۔ ہالینڈ کے سفیر کو فوری طور پر ملک سے نکالا اور اپنے سفیر کو واپس بلایا جائے ۔سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ کشمیر پاکستان کی شہ رگ ہے ۔ پاکستا ن کی بقا اور سلامتی کے لیے کشمیر کی آزادی ضروری ہے اور ہم کشمیر کے لیے آخری حد تک جائیں گے ۔

سراج الحق

مزید :

صفحہ آخر -