تربت، سکیورٹی فورسز کی گاڑی پر دستی بم حملہ،2افراد زخمی

تربت، سکیورٹی فورسز کی گاڑی پر دستی بم حملہ،2افراد زخمی

  

کوئٹہ،ڈیرہ بگتی(آن لائن)بلوچستان کے علاقے تربت میں سیکورٹی فورسز کی گاڑی پر دستی بم حملہ دو افراد زخمی اطلاعات کے مطابق تربت شہر میں واقع نیشنل بینک کے سامنے نامعلوم مسلح افراد نے سیکورٹی فورسز کی گاڑی پر دستی بم سے حملہ کیا جس کے نتیجے میں دو افراد زخمی ہو گئے زخمیوں کو فوری طور پر مقامی ہسپتال منتقل کر دیا گیا واقعہ کی اطلاع ملتے ہی سیکورٹی فورسز نے علاقے کی ناکہ بندی کر دی مزید کا رروائی کی جا رہی ہے۔دریں اثناء سیکورٹی فورسز اور لیویز نے ڈیرہ بگٹی کے مختلف علاقوں سنگسیلہ پیرکوہ اور ٹوبہ نوحقانی میں کاروائی کرتے ہوئے 23 مبینہ شرپسند گرفتار کر لئے جبکہ گرفتار افراد سے بھاری تعداد میں اسلحہ اور گولہ بارود برآمد کرلیا لیویز حکام کے مطابق سیکورٹی فورسز نے ہفتہ اور اتوار کے درمیانی شب ڈیرہ بگٹی کے نواحی علاقوں سنگسیلہ پیرکوہ اور ٹوبہ نوحقانی میں کاروائی کرتے ہوئے 23 مبینہ شرپسند گرفتار کرکے ان کے قبضے سے بھاری تعداد میں اسلحہ اور گولہ بارود برآمد کرلیا برآمد کئے گئے گولہ بارود میں دس کلو بارود 17 کلاشنکوف 4 راکٹ اور سینکڑوں راونڈز شامل تھے گرفتار ہونے والے مبینہ شرپسندوں میں محمد دوران نور احمد کہیری خان مہراللہ نوراحمد محمد رضا محمد علی نیاز محمد زہرو خان توکل شاہ جہان میرمحمد رحمت اللہ ابراہیم محمد علی مصری خان غلام مصطفی شیر محمد جاوید مری سائیں بخش مری مہراللہ غلام علی حمل خان اور شجہ خان نوثانی بگٹی شامل تھے گرفتار ہونے والے افراد کے لیویز نے مقدمات درج کر کے تفتیش شروع کردی۔

تربت حملہ

مزید :

صفحہ آخر -