ہندو برادری نے ’’رکشا بندھن‘‘ کا تہوار منایا

ہندو برادری نے ’’رکشا بندھن‘‘ کا تہوار منایا

کراچی (اسٹاف رپورٹر) سندھ سمیت ملک اور دنیا بھر میں بسنے والی ہندو برادری نے اپنا مذہبی تہوار ’’رکشا بندھن‘‘ روایتی اورمذہبی جوش و جذبے سے منایا۔ ساون کے مہینہ میں راکھی رکشابندھن تہوار کے دن بھائی اپنی بہن سے ہاتھ پر راکھی بندھوا کر بھائی بہن کے مقدس رشتے کو مضبوط کرنے کا عہد کیا جاتا ہے۔ہندو عقیدے کے مطابق رکشا بندھن ایسا تہوار ہے جو بہن اور بھائی کے مقدس رشتے میں مزید محبتوں کے رنگ بھردیتا ہے۔ اس تہوار میں ایک بہن اپنے بھائی کی لمبی عمر اوراس کی خوشحال زندگی کی دعاکرتی ہے جبکہ اس کا بھائی اپنی کلائی پر راکھی بندھوا کر اپنی بہن کی حفاظت کا عہد کرتا ہے جس سے بہن اور بھائی کے رشتے میں محبت، خلوص اور سچائی پیدا ہوتی ہے۔ اس سلسلے میں معروف ماہر پامسٹ اور علم نجوم بھگوان داس نے بتایا کہ ہندو دھرم میں ’’رکشابندھن‘‘راکھی باندھنے کا تہوار انتہائی مقدس اور بھائی بہن کے پریم محبت کے حوالے سے اہمیت کا حامل ہے۔ ہندو دھرم میں ماتا لکشمی دیوی نے اپنے شوہر وشنو بھگوان کو راجہ بھلی کی قید سے چھڑانے اور رہائی دلانے کے لئے لکشمی دیوی نے راجہ بھلی کے ہاتھ پر راکھی ’’رکشا بندھن‘‘ کا دھاگہ باندھ کر راجہ بھلی کو بھائی بنا یا اور وشنو بھگوان کو آزاد کراکر لکشمی دیوی نے راجہ بھلی سے اپنے شوہر وشنو بھگوان کی حفاظت کاوچن لیا۔ اس دن سے دنیا بھر سمیت پاکستان ہندوستان میں بسنے والے ہندو بھائی بہن کے اس مقدس رشتے کو ہرسال بہن اپنے بھائی کے ہاتھ پر راکھی باندھ کر بھائی بہن کے مقدس رشتے کو مضبوط کرنے کے ساتھ ساتھ بھائی بہن کے سچے پریم محبت کے اظہار کا بھی دن ہے۔

مزید : صفحہ آخر


loading...