ڈسکہ میں سسرالیوں کے ہاتھوں خاتون کا قتل، ورثاء پولیس سے مایوس

ڈسکہ میں سسرالیوں کے ہاتھوں خاتون کا قتل، ورثاء پولیس سے مایوس

  

نوشہرہ ورکاں (نمائندہ خصوصی) جہالت کی انتہاء،نرینہ اولاد نہ ہونے پر بہو قتل ڈسکہ پولیس قاتلوں سے مل گئی۔ تفصیلات کے مطابق نوشہرہ ورکاں کی رہائشی روبینہ بی بی کی شادی 13 سال قبل بمبانوالہ ڈسکہ کے رہائشی محمد اشرف سے ہوئی جن کے بطن سے دو بیٹیاں نور فاطمہ اور علیشاہ پیدا ہوئیں اولاد نرینہ نہ ہونے کی وجہ سے سسرالی رشتہ دار مقتولہ روبینہ بی بی کے ساتھ آئے روز لڑائی جھگڑا کرتے رہتے تھے ،عیدالضحی کے دن اسی بات پر پھر جھگڑا ہوا۔ جس پر محمد اشرف اور اس کے بھائی احمد رضا نے فائرنگ کر کے روبینہ بی بی کو قتل کر دیا۔ جب مقتولہ کے بھائی سٹی تھانہ ڈسکہ میں مقدمہ درج کروانے گئے تو تھانہ میں مقتولہ روبینہ بی بی کا قاتل خاوند محمد اشرف بھی موجود تھا پولیس نے ملزم محمد اشرف کو گرفتار کرنے کی بجائے فرار کروا دیا مقتولہ روبینہ بی بی کے ورثاء نے پولیس کے اعلی حکام سے اپیل کی ہے کہ ڈسکہ کی مقامی پولیس بالکل جانبداری کا مظاہرہ کر رہی ہے ۔لہٰذا مقدمہ کی تفتیش کسی دوسرے شہر میں قابل اور ایماندار آفیسر سے کروائی جائے۔

مزید :

علاقائی -