100دن میں علیحدہ صوبہ ورنہ احتجاج، لانگ مارچ

100دن میں علیحدہ صوبہ ورنہ احتجاج، لانگ مارچ

  

ملتان(سٹی رپورٹر)ہم عمران خان کے وعدے کے مطابق 100 دنوں کا انتظار کر رہے ہیں ۔ اگر صوبہ نہ ملا تو سڑکوں پر احتجاج اور لانگ مارچ ہوگا اور جیل بھرو تحریک چلانے سے بھی دریغ نہیں کریں گے ۔ان خیالات کا اظہار سرائیکستان صوبہ محاذ کے چیئرمین خواجہ غلام فرید کوریجہ اور شریک (بقیہ نمبر42صفحہ12پر )

چیئرمین ظہور دھریجہ نے دھریجہ نگر کی سرائیکستان یکجہتی کانفرنس کی تیسری اور اختتامی نشست سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ انہوں نے کہا کہ ہم اپنے حق کیلئے ہر طرح کی قربانی دینے کیلئے تیار ہیں ۔ اس موقع پر تقریب کے میزبان ظہور دھریجہ نے قراردادیں پیش کیں ، حاضرین نے ہاتھ بلند کر کے منظوری دی ۔سرائیکستان یکجہتی کانفرنس کی ایک قرارداد میں کہا گیا کہ چولستان کی زمینوں کو قبضہ گروپوں سے بچانے کیلئے پچاس لاکھ ایکڑ پر مشتمل چولستان ایجوکیشنل سٹی قائم کر کے پوری دنیا کی سب سے بڑی چولستان یونیورسٹی قائم کی جائے اور اس کے تحت ایک ہزار ذیلی تعلیمی ادارے قائم کئے جائیں ۔ دیگر قراردادوں کے مطابق خانپور کیڈٹ کالج کا معطل شدہ کام فوری طور پر شروع کرایاجائے ۔ جیٹھہ بھٹہ شوگر فارم کے رقبے پر زرعی یونیورسٹی بنائی جائے ۔ خانپور کی ضلعی حیثیت بحال کر کے رحیم یارخان کو ڈویژن کا درجہ دیا جائے ۔ نشتر گھاٹ کی اپروچ روڈز کا کام فوری مکمل کرایا جائے ۔چنی گوٹھ تا چوک بہادر پور سڑک کو دو رویہ کیا جائے۔سی پیک منصوبے میں بہاولپور ڈویژن کو شامل کیا جائے ۔سی پیک منصوبے کے تحت سرائیکی وسیب کو صنعتی بستیاں دی جائیں ۔پورے سرائیکی خطے کو ٹیکس فری انڈسٹریل زون قرار دیا جائے ۔جب تک صوبہ نہیں بنتا سی ایس ایس کا کوٹہ الگ کیا جائے ۔این ایف سی کا ڈسٹرکٹ کی سطح پر اجراء کیا جائے ۔چاچڑاں ریلوے لائن کو بحال کیا جائے ۔چاچڑاں کوٹ مٹھن کے درمیان ریلوے پُل بنایا جائے ۔خانپور سے چلنے والی روہی ایکسپریس اور روہڑی ایکسپریس کو بحال کیا جائے ۔چولستان میں ناجائز الاٹمنٹوں کا خاتمہ کیا جائے ۔ فنکاروں کی تقریبات کے لئے ساؤنڈ ایکٹ کی پابندی ہٹائی جائے۔ کوٹ مٹھن میں خواجہ فرید یونیورسٹی قائم کی جائے۔اس موقع پر سرائیکی رہنماء خواجہ غلام فرید کوریجہ اور ظہور دھریجہ نے سرائیکی سنگرزوسرائیکی شعراء قمر نواز چھینہ ،اظہار عباس،سلیم ناصر،سعید ثروت ،ایوب بلوچ،جاوید سانول ،اظہار عباس،حمید سانول ،خالد حسین بھٹی ،ڈاکٹر ظہور اعوان ،امان اللہ ارشد ،رفیق ساحل ،فیض احمد آسیر،رفیق احمد رفیق،عبدالستار زائر ،عبدالقادر بیوس ،الہٰی بخش ٹھگی ،ہوشو شیدی ،زاہد جھُلن ،جام ساجد سامر،رستم بلوچ،اصغر بھٹی ،شعیب راول کو ایوارڈز اور کتابوں کے تحائف پیش کیے ۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -