کے پی کے میں لو شیڈنگ کیخلاف زبر دست مظاہرے

کے پی کے میں لو شیڈنگ کیخلاف زبر دست مظاہرے

  

پشاور(این این آئی)خیبرپختونخواکے مختلف اضلاع میں بجلی کی غیراعلانیہ طویل لوڈشیڈنگ اورکم وولٹیج کاسلسلہ جاری ہے،مختلف علاقوں میں لوڈشیڈنگ کے خلاف احتجاجی مظاہرے بھی ہوئے،شہریوں نے بجلی کے بل جمع نہ کرنے کی دھمکی بھی دیدی۔صوبے کے بیشتراضلاع میں بجلی کی غیراعلانیہ لوڈشیڈنگ نے لوگوں کی زندگی اجیرن کردی،بجلی نہ ہونے کی وجہ سے لوگوں کوشدیدمشکلات کاسامناہے،مسجدوں اورگھروں میں پانی تک میسر نہیں ،مختلف اضلاع میں احتجاج کے ساتھ ساتھ بجلی کے بل جمع نہ کرنے کابھی فیصلہ کیاگیا ہے۔ مردان،صوابی،چارسدہ، ملاکنڈڈویژن،کرک ،کوہاٹ سمیت دیگر علاقوں میں بجلی نہ ہونے کے برابرہے۔ ضلع کرک کے رہائشیوں نے بجلی کا بل کم وولٹیج کی وجہ سے جمع کرانے سے انکار کردیاہے۔یونین کونسل ناظم فیاض کے مطابق ٹیری ضلع کرک کا سب سے بڑا گاؤں ہے جس کی آبادی چالیس ہزار کے قریب ہے ۔ ٹیری کے عوام بجلی کے بل جمع کرارہے ہیں سب ڈویژن لاچی کے حکام کم وولٹیج میں ملوث ہیں جسمیں لائن سپرنٹنڈنٹ اور دیگر عملہ ملوث ہے چیف پیسکو کو بھی کم وولٹیج اور بجلی کے مسئلے سے آگاہ کیا گیا ہے مگر اسکی جانب سے کوئی شنوائی نہیں ہورہی جب تک کم وولٹیج کا مسئلہ حل نہیں ہوگا عوام بجلی کا بل جمع نہیں کرائیں گے ۔ضلع مردان اورصوابی میں بھی بجلی کی غیراعلانیہ لوڈشیڈنگ کے خلاف لوگ سراپا احتجاج ہیں اور حکمرانوں سے فی الفور مسئلہ حل کرنے کامطالبہ کیا ہے۔

کے پی کے؍لوڈ شیڈنگ

مزید :

پشاورصفحہ آخر -