ڈیرہ، کارخانہ مالکان کا برف دوسرے اضلاع سمگل کرنے کا سلسلہ شروع

ڈیرہ، کارخانہ مالکان کا برف دوسرے اضلاع سمگل کرنے کا سلسلہ شروع

  

ڈیرہ اسماعیل خان(بیورورپورٹ)انتظامیہ کی غفلت ونااہلی کے باعث برف کارخانہ مالکان نے برف کودوسرے اضلاع سمگل کرنے کاسلسلہ شروع کردیا‘شہری برف بلیک میں مہنگے داموں خریدنے پر مجبور‘انتظامیہ بے بس نظرآنے لگی‘شہریوں کابرف کارخانہ مالکان اورانتظامیہ کے خلاف سخت احتجاج ۔تفصیلات کے مطابق ڈیرہ اسماعیل خان سے برف کارخانہ مالکان نے پیسے کمانے کے چکر میں کارخانوں کی برف مقامی طورپر فروخت کرنے کی بجائے دیگراضلاع میں سمگل کرنے کا سلسلہ کھلے عام شروع کررکھاہے ۔سخت گرمی ،حبس اوربجلی کی ظالمانہ لوڈشیڈنگ ، ٹرپنگ اورکم وولٹیج کی وجہ سے گھروں میں برف نہ بننے اورمختلف ہوٹلوں اوردکانوں کے مالکان کی طرف سے برف خریدنے کے لیے جانے والے شہریوں کوبرف نہیں مل رہی ہے اورشہری بلیک میں مہنگے داموں برف خریدنے پر مجبورہیں ۔ بلیک میں ملنے والی برف بھی زنگ آلود اورناقص ہے ۔ اس ساری صورتحال میں مقامی انتظامیہ پراسرارطورپر خاموش ہے جبکہ اس ساری صورتحال کی وجہ سے شہریوں نے انتظامیہ اوربرف کارخانہ مالکان کے خلاف سخت احتجاج کیاہے اورخیبرپختونخواحکومت سے مطالبہ کیاہے کہ اس مسئلہ کافی الفورنوٹس لیتے ہوئے شہریوں کے لیے فوری طورپربرف کارخانہ مالکان کوبرف دینے کا پابند کیاجائے اوربرف کی دیگراضلاع پر فروخت پر دفعہ144کانفاذکیاجائے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -