19 سالہ لڑکی نے 17سالہ لڑکی پر تیزاب پھینک دیا، اس حرکت کی وجہ ایسی شرمناک ترین کہ کوئی سوچ بھی نہ سکتا تھا یہ بھی ممکن ہے

19 سالہ لڑکی نے 17سالہ لڑکی پر تیزاب پھینک دیا، اس حرکت کی وجہ ایسی شرمناک ترین ...
19 سالہ لڑکی نے 17سالہ لڑکی پر تیزاب پھینک دیا، اس حرکت کی وجہ ایسی شرمناک ترین کہ کوئی سوچ بھی نہ سکتا تھا یہ بھی ممکن ہے

  

آگرہ(نیوز ڈیسک) تیزاب گردی جیسے بھیانک جرم کے واقعات گاہے بگاہے سامنے آتے رہتے ہیں۔ عموماً اس جرم کا ارتکاب وہ بدقماش مرد کرتے ہیں جو کسی خاتون کو ہوس کا نشانہ بنانے کی کوشش میں ہوتے ہیں مگر جب یہ گندی کوشش ناکام ہوتی ہے تو بدلہ لینے کے لئے تیزاب پھینک دیتے ہیں۔ سو، مردوں کی جانب سے خواتین پر تیزاب پھینکنے کے واقعات پیش آتے رہتے ہیں مگر بھارت میں ایک عجیب کام ہو گیا۔ آگرہ شہر سے تعلق رکھنے والی ایک لڑکی نے جنسی مطالبات پورے نا ہونے پر مشتعل ہو کر ایک اور لڑکی کو تیزاب میںنہلا دیا۔

ٹائمز آف انڈیا کے مطابق جمعرات کے روز کربلا کالونی کے علاقے میں ایک 17 سالہ لڑکی گھر کی بالکونی میں سو رہی تھی کہ جب کسی نے اس پر تیزاب پھینک دیا۔ لڑکی کی چھاتی، بازو اور چہرے کو تیزاب سے شدید نقصا ن پہنچا اور ہسپتال میں اس کی حالت نازک بتائی جاتی ہے۔

اس لرزہ خیز جُرم کا پہلا الزام متاثرہ لڑکی کے ایک سابق کلاس فیلو پر لگا اور پولیس نے اُسے گرفتار کر لیا۔ دوران تفتیش یہ بات سامنے آئی کہ متاثرہ لڑکی اور اس کے مالک مکان کی 19 ساکی بیٹی کے درمیان گزشتہ کچھ عرصے سے تلخی چل رہی تھی جس پر پولیس نے مالک مکان کی لڑکی کو بھی شامل تفیش کر لیا۔ پوچھ گچھ کے دوران اُس نے شرمناک انکشاف کیا کہ وہ متاثرہ لڑکی کے ساتھ جنسی مراسم رکھتی تھی لیکن دو ماہ قبل جب اُس نے دوستی ختم کر دی تو اسے سبق سکھانے کا فیصلہ کر لیا۔ اس سفاک لڑکی نے موقع پا کر اپنی سابق سہیلی پر تیزاب پھینک دیا، یعنی ہوس کے ہاتھوں اندھی ہو کر ایسا ظلم کر ڈالا کہ جس کا تصور کر کے ہی انسان کانپ جائے۔ نوعمر لڑکی کی حالت نازک بتائی جاتی ہے جبکہ ڈاکٹروں کا کہنا ہے کہ اُس کی زندگی بچ بھی گئی تو وہ زندہ لاش سے زیادہ کچھ نہیں ہو گی۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -بین الاقوامی -جرم و انصاف -