ایف اے ٹی ایف بل کا مسترد ہونا ملکی سیاست کیلئے لمحہ فکریہ:عبدالعلیم خان

ایف اے ٹی ایف بل کا مسترد ہونا ملکی سیاست کیلئے لمحہ فکریہ:عبدالعلیم خان

  

 لاہور(نمائندہ خصوصی)سینئر وزیر پنجاب عبدالعلیم خان نے کہا ہے کہ سینٹ میں ایف ا ے ٹی ایف بل کا مسترد ہونا افسوسناک اور ملکی سیاست کے لیے لمحہ فکریہ ہے اپوزیشن نے اینٹی منی لانڈرنگ کی آئین سازی میں ساتھ نہ دے کر نہ صرف قومی مفاد کو پس پشت ڈالا ہے بلکہ ثابت کیا ہے کہ ملکی خزانہ لوٹنے والوں اور اقتدار کی باریاں لینے والوں کے نزدیک پاکستان کے تحفظ اور سا  لمیت کی کوئی اہمیت نہیں اور نہ ہی انہیں عالمی برادری میں قومی تشخص کی کوئی پرواہ ہے اپنے ٹوئٹ میں سینئر وزیر پنجاب عبدالعلیم خان کا کہنا تھا کہ اپوزیشن رہنما درحقیقت این آر او نہ ملنے پر اپنے اراکین کو استعمال کر رہے ہیں اور بالخصوص سینٹ میں اس اہم ترین آئین سازی پر جس غیر ذمہ دارانہ طرز عمل کا مظاہرہ کیا گیا ہے وہ انتہائی معنی خیز اور سنجیدہ معاملہ ہے۔ عبدالعلیم خان نے کہا کہ ایسے سیاسی ہتھکنڈوں سے عمران خان جیسے لیڈر کو مرعوب نہیں کیا جا سکتا،کوئی کچھ بھی کر لے وزیر اعظم کسی کو بھی این آر او نہیں دیں گے ا عبدالعلیم خان نے مزید کہا کہ عوام بھی اپوزیشن کی ایسی منفی سیاست کی ہرگز حمائیت نہیں کریں گے،بہتر ہوگا کہ اپوزیشن رہنما سنجیدگی کا مظاہرہ کرتے ہوئے اپنے طرز عمل پر نظر ثانی کریں سینئر وزیر عبدالعلیم خان نے کہا کہ گزشتہ2برسوں میں ماضی کے 30برسوں کی کرپشن سامنے آ چکی ہے جس کو چھپانے کے لئے اپوزیشن جماعتیں اکٹھے ہونے جا رہی ہیں لیکن با شعور عوام اب اُن کے بہکاوے میں نہیں آئیں گے۔

عبدالعلیم خان 

مزید :

صفحہ آخر -