سینیٹ اطلاعات کمیٹی نے میڈیا کو انڈسٹری کا درجہ دینے کی سفارش کردی 

سینیٹ اطلاعات کمیٹی نے میڈیا کو انڈسٹری کا درجہ دینے کی سفارش کردی 

  

اسلام آباد(آئی این پی)سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے اطلاعات نے میڈیا کو انڈسٹری کا درجہ دینے کی سفارش کردی اور وفاقی سیکرٹری اطلاعات  سے آئندہ اجلاس میں میڈیا کو انڈسڑی کا درجہ دینے کے حوالے سے اقدامات پر تفصیلی بریفنگ طلب کرلی۔ کمیٹی نے پاکستان الیکٹرونک میڈیا ریگولیٹر اتھارٹی ترمیمی بل 2020منظورکر لیا۔ بل کے تحت صحافی،میڈیا ورکرز اور میڈیا آرگنائزیشن کے درمیان کنٹریکٹ لازمی ہوگا،پیمرا میڈیا ہاؤس اور ملازمین کے مابین  کنٹریکٹ میں ڈیوٹیز اور معاوضہ کی تحریری تفصیلات یقینی بنائے گا، پیمرا بروقت تنخواہیں ادا نہ کرنے والے چینل کیخلاف کارروائی کرسکے گا۔کمیٹی نے نجی چینلز پر غیر معیاری ڈراموں پر سخت تنقید کرتے ہوئے کہا کہ اخلاق باختہ کانٹنٹ چل رہاہے، پیمرا سو رہاہے؟ ایسے ڈرامے دکھائے جارہے ہیں جس سے ہمارے بچے تباہ ہورہے ہیں۔پیمرا حکام نے انکشاف کیا کہ ہمارے پاس نجی چینلز کے ڈراموں کی نگرانی اور ایکشن لینے کا کوئی نظام یا اختیار نہیں۔بدھ کو قائمہ کمیٹی کا اجلاس چیئرمین سینیٹر فیصل جاوید کی زیر صدارت ہوا۔اجلاس میں کمیٹی ارکان کے علاوہ سیکرٹری وزارت اطلاعات و نشریات اکبر حسین درانی، ایم ڈی پی ٹی وی اور دیگر اعلیٰ حکام نے شرکت کی۔اجلاس میں چیئرمین سینیٹر فیصل جاوید کے پیمرا آرڈیننس کے سیکشن 2، سیکشن 4 اور سیکشن 30 میں ترامیم کے بل پر غور کیا گیا۔ چیئرمین کمیٹی نے کہا کہ مختلف ٹی وی چینلز ملازمین کو ہائر کر لیتے ہیں مگر دو، دو سال تک ان کو تنخو اہیں نہیں ملتی دنیا بھر میں قواعد و ضوابط کے تحت لوگوں کو ہائر کیا جاتا ہے اور اْ نکی مناسب مانیٹرنگ بھی کی جاتی ہے۔

پیمرا

مزید :

صفحہ آخر -