قادیانیت کی کمر ٹوٹ چکی ہے:سینیٹر عطائالرحمان

قادیانیت کی کمر ٹوٹ چکی ہے:سینیٹر عطائالرحمان

  

 نوشہرہ (بیورورپورٹ) قادیانیت کی کمرٹوٹ چکی ہے جمعیت کے ہوتے ہوئے ناموس رسالت قانون میں تبدیلی کا سوچنا پاگل پن ہے. 7 ستمبر کا ختم نبوت کانفرنس تاریخ ساز ہوگا. ان خیالات کا اظہار جمعیت علماء اسلام صوبہ خیبر پختون خواہ کے امیر سینٹر مولاناعطاء الرحمن، جنرل سیکرٹری مولانا عطاء الحق درویش، صوبائی سیکرٹری اطلاعات حاجی عبدالجلیل جان اور ضلعی جنرل سیکرٹری مفتی حاکم علی حقانی نے جمعیت علماء اسلام ضلع نوشہرہ کے مجلس عمومی کے خصوصی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا. اجلاس کی صدارت ضلعی امیر قاری محمداسلم حقانی نے کی.اجلاس میں سابق چئیرمین حاجی اسحاق خٹک اور سابق امیدوار قومی اسمبلی پیر ذوالفقار باچا نے بھی شرکت کی. مقررین نے کہا کہ موجودہ حکومت جس ایجنڈے پر اقتدار میں لائی گئی ہے اور جس مشن پر عمل پیرا ہے. اسکے آگے پاکستان کے غیور عوام علماء حق کی قیادت میں سیسہ پلائی ہوئی دیوار ہے.انہوں نے کہا کہ پاکستان میں ناموس رسالت کے گستاخان کو جیلوں میں رکھ کر سزا نہ دینا بھی مغربی ایجنڈا ہے جس کے لئے موجودہ حکومت قانون سازی کی مذموم کوشش کررہی ہے لیکن جمعیت علماء اسلام کے سرفروش ممبران سیسہ پلائی ہوئی دیوار ہے. AFTF میں قانون سازی پاکستان کو دوبارہ امریکی غلامی میں دینے کی سازش ہے. انہوں نے کہا کہ 7 ستمبر کو پشاور میں یوم الفتح کے دن تاریخ ساز تحفظ ختم نبوت کانفرنس قادیانیت نواز حکمرانوں کی تابوت میں آخری کیل ثابت ہوگی.۔

مزید :

کامرس -صفحہ اول -