قیام امن: علماء تاجروں کا محرم الحرام میں بھرپور کردار ادا کرنیکا فیصلہ 

قیام امن: علماء تاجروں کا محرم الحرام میں بھرپور کردار ادا کرنیکا فیصلہ 

  

ملتان(نیوز رپورٹر) تاجروں اور علماء کرام نے باہمی مشاورت سے مشترکہ طور پر فیصلہ کیا ہے کہ محرم الحرام کے تقدس کو ملحوظ خاطر رکھتے ہوئے علماء کرام اور تاجر رہنماء امن و امان کے قیام اور بین المذاہب رواداری کے فروغ کے لیئے مشترکہ کردار ادا کریں کچھ شر پسند عناصر کافی عرصہ سے سوشل میڈیا پر نفرت انگیز مواد کو لوڈ کرکے مذہبی دہشت گردی اور مذہبی تصادم کو ہوا دینے کی(بقیہ نمبر16صفحہ6پر)

 کوشس کی جارہی ہے اور دیگر ذرائع سے حالات کو خراب کر کے وہ قوتیں متحرک ہیں لیکن حکومت نے ان کے خلاف کوئی کاروائی نہیں کی جس کی وجہ سے عوام میں شدید غم و غصہ پایا جاتا ہے ہم اس سلسلے کو روکنے کے لئے تاجر برادری اور علمائے کرام مل کر اس سازش کو ناکام بنانے چاہتے ہیں ان خیالات کا اظہار تاجر رہنماء محمد اختر بٹ، ملک سلطان محمود، عارف فصیح اللہ، شیخ شفیق، مذہبی رہنماوں میں ایوب مغل، آصف محمود اخوانی، علامہ خالد محمود ندیم، صوفی عبدالرحمان بھٹی و دیگر نے پریس کلب میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا، انہوں نے کہا کہ یہ ملک ہمارا ہے ہم سب کا فرض ہے کہ پاکستان کو امن کا گہوارہ بنا ئیں ہم اس موقع پر سیدنا امام حسین ؓاور شہدائے کربلا اور رفقائے امام حسین ؓ کو سلام عقیدت پیش کرتے ہیں سیدنا امام حسین ؓاور ان کے رفقا کی قربانی سے اسلام کو نئی زندگی ملی آج امام حسین ؓکے نقش قدم پر چلتے ہوئے وقت کے یزیدوں کے سامنے کلمہ حق کو بلند کرتے ہوئے حکومت وقت سے مطالبہ کرتے ہیں ان تمام پوسٹوں کو جس سے مذہبی دل آزاری اور انتشار کو ہوا دی جارہی ہے اسے سوشل میڈیا سے فوری طور پر ہٹایا جائے اور فحاشی اور عریانی پوسٹ کو بھی ہٹایا جائے تاکہ بے حیائی کے سیلاب کو روکا جا سکے۔ علمائے کرام اور تاجروں کا یہ اتحاد محرم پر امن و امان قائم رکھنے کی ہر ممکن کو شش کرے گا تاہم انتظامیہ کو حالات پر کڑی نظر رکھنی چاہئے اس دوران اہل بیت اطہار، امہات المومنین، خلفائے راشدین اور صحا بہ کرام کی شان میں کوئی بھی شر پسند اگر گستاخی کرے اس پر فو ری قانونی گرفت کرنی چاہئے تا کہ امن میں خلل نہ پڑے اس موقع پر علما ئے کرام اور ذاکرین سے گزارش کی جاتی ہے کہ وہ احتیاط کا دامن ہاتھ سے قطعا نہ چھوڑے۔ براہ کرم تمام جلوسوں کے شرکائے حکومت کی طرف سے بتائے گئے ایس او پیز اور روٹ کی مکمل پابندی کرتے ہوئے پوشیدہ شر پسند عناصر پر گہری نظر رکھیں تمام تاجران جلوس میں آنے والے راستوں پر موجود تجاوزات اور رکاوٹوں کو فورا ہٹا دیں تمام تاجر تنظیمیں اپنے اپنے بازاروں میں شر پسندوں پر کڑی نظر رکھیں انتظامیہ سے مکمل تعاون کریں تاجر برادری اور علمائے کرام انتظامیہ کے شانہ بشانہ کھڑے ہیں ہم تاجر اور علمائے کرام نویں اور دسویں محرم کو جلوسوں کے راستوں پر امن امان رکھنے کے لئے وہاں موجود رہے گئے تاکہ کسی بھی مسلک کا کو تنازعہ پیدا نہ ہو۔پاک فوج کی ملکی سرحدوں کی حفاظت اور ملک میں امن و امان قائم رکھنے کی کاوشوں کو تحسین کی نظر سے دیکھتے ہیں اور پاکستانی فوج کو سلام پیش کرتے ہیں۔

فیصلہ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -