مختلف حادثات‘ واقعات میں 7 ہلاکتیں‘ شیر شاہ روڈ سے لاش برآمد 

مختلف حادثات‘ واقعات میں 7 ہلاکتیں‘ شیر شاہ روڈ سے لاش برآمد 

  

ملتان + ڈیرہ + وہاڑی + دائرہ دین پناہ + بورے والا(وقائع نگار‘ بیورو رپورٹ‘ نمائندگان پاکستان) کوٹ چھٹہ کی بستی یاکی میں کرنٹ لگنے سے ماں اور بیٹا جاں بحق ہوگئے۔ تفصیلات کے مطابق ڈیرہ غازیخان کی تحصیل کوٹ چھٹہ کی بستی یاکی میں پندرہ سالہ کاشف (بقیہ نمبر40صفحہ6پر)

ولد عاطف حسین اپنے گھر میں بیٹھا پنکھا مرمت کر رہا تھا کہ اچانک پنکھے میں کرنٹ آگیا اور وہ اس سے چپک گیااور تڑپنے لگا اسی  اثناء میں اسکی والدہ تیس سالہ حسینہ بی بی کمرے میں آئی اوراپنے لخت جگر کو تڑپتے ہوئے دیکھا اور کھینچ کراسے بچانے کی کوشش کی تو اسے بھی بجلی کی بے رحم لہروں نے اپنی لپیٹ میں لے لیا اور اس طرح دونوں ماں اور بیٹا کرنٹ لگنے کے سبب موقع پر ہی جاں بحق ہوگئے ریسکیو اہلکاروں نے موقع پر پہنچ کر دونوں کے موت کی تصدیق کی۔ بوریوالا روڈ کسم سر کے قریب تیز رفتار بس کار کو روند کر فرار حادثہ کے نتیجہ میں 247ای بی گگو منڈی کے رہائشی عمران اور اس کی بیوی ماروی موقع پر جاں بحق ہوگئے جبکہ گاڑی میں موجودان کے کزن فیصل اور اس کی بیوی ناصرہ شدید زخمی ہوگئے نعشوں اور زخمیوں کو پٹرولنگ پولیس پوسٹ اہلکاروں نے ہسپتال منتقل کردیا جبکہ تاحال  ہٹ کرنے والی بس کا کوئی پتہ نہیں چل سکا۔ رشتہ دارکی قل خوانی میں بیٹے کے ہمراہ موٹر سائیکل پر جانیوالی 45سالہ خاتون ٹائرمیں چادر پھنس جانے کے باعث بے قابو ہوکرسڑک پر جاگری‘ سرپر لگنے والی گہری چوٹ کے باعث ہسپتال میں جاں بحق ہوگئی۔ گزشتہ روز چک67عباسیہ کی رہائشی45 سالہ غلام فاطمہ اپنے بیٹے محمد عدیل کے ہمراہ موٹر سائیکل قریبی رشتہ دارکی قل خوانی میں شرکت کے لئے جارہی تھی کہ اچانک موٹر سائیکل کے ٹائرمیں چادر پھنس جانے کے نتیجہ میں بے قابو ہوکر سر کے بل سڑک پر جاگری اورشدید زخمی ہوگئی۔‘جسے فوری طور پرطبی امداد کیلئے ہسپتال منتقل کیا گیا جہاں 45سالہ غلام فاطمہ طبی امداد کے باوجود دم توڑگئی‘ ہسپتال انتظامیہ نے کارروائی کے بعد لاش تدفین کیلئے ورثاء کے حوالے کردی۔ تھانہ کینٹ کے علاقے میں 45 سالہ شخص کی نعش برآمد ہوئی ہے،پولیس نے موقع پر پہنچ کر  لاش قبضے میں لے کر نشتر کے سرد خانے میں منتقل کر دی ہے  پولیس کے مطابق اصل حقائق پوسٹ مارٹم کے بعد سامنے آئیں گے۔تفصیل کے،مطابق عسکری فیز ٹاون شیر شاہ روڑ کے قریب ایک شخص مردہ حالت میں پایا گیا جس کی اطلاع متعلقہ پولیس کو دی گئی، پولیس نے موقع پر پہنچ کر نامعلوم شخص کی نعش تحویل میں لیکر نشتر ہسپتال کے سرد خانے منتقل کردی گئی ہے،پولیس کے مطابق نعش سات سے آٹھ دن پرانی جس کی شناخت نہ ہوسکی ہے اور چہرہ بھی مسخ شدہ ہے تاہم اصل حقائق پوسٹ مارٹم رپورٹ کے بعد منظر عام پر لاکر ذمہ داران کے خلاف کارروائی عمل میں لائی جائے گی اس لئے قبل ازوقت کچھ کہنا ٹھیک نہ ہوگا۔ گھریلو حالات سے دلبرداشتہ دوشیزہ نے کالا پتھر پی کر موت کو گلے لگا لیا۔ تونسہ موڑ کے رہائشی محمد افضل کوکارہ اپنی جواں سال بیٹی بانو کا رشتہ اپنے بیٹے کے تبادلے میں دینا چاہتا تھا اور عاشورہ کے بعد شادی کی تاریخ دینا باقی تھی بائیس سالہ بانو اپنے گھر میں پہلی میٹرک پاس تھی اور شعور رکھتی تھی اس نے اس شادی سے انکار کیاوالدین کے دباو پر اس نے گزشتہ روز کالا پتھر پی کر موت کو گلے لگا لیااور رات کی تاریکی میں گھر کے 22 افراد نے جنازہ پڑھ کے قبر میں اتار دیا پولیس کو اس کا علم بھی نہ ہونے دیا۔ نواحی گاوں 463/ ای بی کی رہائشی غریب محنت کش کی 18 سالہ بیٹی شکیلہ بی بی کی گذشتہ شب پرسرار طور پر موت واقع ہوگئی موت کی وجہ سر میں فائر لگنا بتائی گئی ہے تھانہ فتح شاہ پولیس نے اطلاع ملنے پر خاتون کی نعش پوسٹ مارٹم کے لئے ٹی ایچ کیو ہسپتال بورے والا منتقل کردی خاتون کے خاوند محمد اختر کھوکھر ایڈووکیٹ کے مطابق اس نے خودکشی کی ہے جبکہ ابھی تک یہ معمہ حل نہیں ہوسکا دوسری جانب خاتون کے والد بھی اس حوالہ سے خاموش دکھائی دے رہے ہیں واضح رہے کہ 4 سال قبل مقامی وکیل نے اپنی پہلی بیوی کو طلاق دیکر گاوں کے محنت کش کی بیٹی شکیلہ سے پسند کی شادی کی تھی جسکے بطن  سے دو بچے بھی ہیں اور ذرائع کے مطابق وہ ان دنوں بھی حاملہ تھی اس پرسرار موت پر کئی سوالات جنم لے رہے ہیں کہ کیا یہ خودکشی ہے یا قتل لیکن قانون اس بارے پوسٹ مارٹم رپورٹ آنے تک خاموش ہے ایس ایچ او تھانہ فتح شاہ کا کہنا ہے کہ پوسٹ مارٹم رپورٹ آنے کے بعد پتہ چلے گا یہ خودکشی ہے یا کچھ اور،خاتون کے والد نے بھی کوئی کاروائی نہ کروانے کا کہا ہے پولیس نے خودکشی کی دفعات کے تحت مقدمہ درج کر لیا ہے یہ خودکشی ہے یا قتل تاہم تاحال یہ معمہ حل نہیں ہوسکا۔

حادثات

مزید :

ملتان صفحہ آخر -