جہانگیر ترین کی کمپنی کے خلاف منی لانڈرنگ کی تحقیقات کا آغاز

جہانگیر ترین کی کمپنی کے خلاف منی لانڈرنگ کی تحقیقات کا آغاز
جہانگیر ترین کی کمپنی کے خلاف منی لانڈرنگ کی تحقیقات کا آغاز

  

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)ایف آئی اے نے تحریک انصاف کے سینئر رہنماءجہانگیر ترین کی کمپنی کے خلاف منی لانڈرنگ کے الزام میں تحقیقات شروع کر دیں۔ نجی ٹی وی چینل اے آر وائی کے مطابق ایف آئی اے کی طرف سے ایک تفتیشی ٹیم تشکیل دی گئی ہے جس نے ملتان، لاہور، کراچی، اسلام آباد اوررحیم یار خان کے ڈپٹی کمشنرز کو خط لکھ کر جہانگیر ترین، ان کے بیٹے علی ترین اور ان کی کمپنی سے منسلک دیگر لوگوں کے بینک اکاﺅنٹس اور جائیدادوں وغیرہ کی تفصیلات طلب کر لی ہیں۔ 

تفتیشی ٹیم کی طرف سے لاہور ڈویلپمنٹ اتھارٹی اور کیپیٹل ڈویلپمنٹ اتھارٹی کو بھی خطوط لکھے گئے ہیں اور مذکورہ لوگوں کے اثاثوں کی تفصیل مہیا کرنے کو کہا گیا ہے۔ جن ڈپٹی کمشنرز کو خطوط لکھے گئے ہیں ان میں سے ایک نے بتایا ہے کہ انہیں جہانگیر ترین اوران کے خاندان کے افراد سمیت کل 22افراد کے بینک اکاﺅنٹس اور جائیدادوں وغیرہ کی تفصیل مہیا کرنے کو کہا گیا ہے۔ ایف آئی اے نے سکیورٹی ایکسچینج کمپنیز آف پاکستان (ایس ای سی پی)کو بھی جہانگیر ترین کے نام پر رجسٹرڈ کمپنیوں کی تفصیلات فراہم کرنے کا کہہ دیا ہے۔

مزید :

بین الاقوامی -