فوجی عدالتیں قائم کرنے کیلئے آئین میں فوری ترامیم کی جائیں،رفیق انیس

فوجی عدالتیں قائم کرنے کیلئے آئین میں فوری ترامیم کی جائیں،رفیق انیس

لاہور (جنرل رپورٹر ) فلاحی ادارے میسو گرومنگ سسٹم کے شعبہ لیگل ڈیپارٹمنٹ کے ڈائریکٹر رفیق انیس ایڈووکیٹ نے دہشت گردی کے خاتمے کیلئے سیاسی ، مذہبی اور فوجی قیادت کے اتحاد کو ملک وقوم کیلئے نیک شگون قرار دیتے ہو ئے کہا ہے کہ ملک وقوم کے وسیع تر مفاد میں جمہوری حکومت آئین کے آرٹیکل245کے تحت فوجی عدالتیں قائم کر سکتی ہے، ان خیالات کا اظہار انہوں نے گذشتہ روز مقامی ہو ٹل میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ دہشت گردی کے ناسور سے نجات حاصل کرنے کیلئے فوجی عدالتوں کا قیام وقت کی اہم ترین ضرورت بن چکا ہے لہذا فوجی عدالتوں کے قیام کے لئے حکومت ہنگامی بنیادوں پر آئین میں ترامیم کرے ، انہوں نے کہا کہ دہشت گردوں نے حساس تنصیبات ، مسجدوں، امام بارگاہوں، سکولوں اور پبلک مقامات پر حملے کیے جس سے قیمتی جانوں کا ضیاع ہو ا،لہذاپاکستان کو امن کا گہوارہ بنانے کے لئے حکومت اور فوج بلاامتیاز سزا یافتہ مجرموں کو پھانسیاں دیکر منطقی انجام تک پہنچائے ۔

رفیق انیس ایڈووکیٹ نے علماء کرام سے اپیل کرتے ہوئے کہا کہ وہ ملک سے دہشت گردی، انتہا پسندی اور فرقہ واریت کے خاتمے کے لئے اپنا کردار ادا کریں ۔ انکا کہنا تھا کہ قومی قیادت کی جانب سے کئے جانے والے جراٗت مندانہ متفقہ فیصلوں کی بدولت بہت جلد پاکستان سے دہشت گردی کا ناسور ہمیشہ کے لئے ختم ہوجائے گا ۔

مزید : میٹروپولیٹن 1