شاہدرہ، گیس چوری کے جھگڑے پر قتل ہونیوالاپراپرٹی ڈیلر سپرد خاک

شاہدرہ، گیس چوری کے جھگڑے پر قتل ہونیوالاپراپرٹی ڈیلر سپرد خاک

لاہور(کرائم سیل)شاہدرہ کے علاقہ میں کرایہ دار اور اس کے ساتھیوں کے ہاتھوں قتل ہونے والے 2بچوں کے باپ کی نعش کو پولیس نے پوسٹ مارٹم کی کارروائی مکمل ہونے کے بعد ورثا کے حوالے کر دیا جسے بعد ازاں سینکڑوں سوگواروں کی موجودگی میں سپرد خاک کر دیا گیا۔تفصیلات کے مطابق شاہدرہ کے علاقہ کا رہائشی 30سالہ محمد جمیل احمد پراپرٹی کا کام کرتا ہے جبکہ اس نے اپنی دو دکانیں امانت علی نامی شخص کو کرایہ پر دے رکھی تھیں جس میں اس نے گتے کا گودام اور فیکٹری بنا رکھی تھی۔ امانت علی اور محمد جمیل میں کئی بار گیس چوری کے حوالے سے تلخ کلامی ہو چکی تھی لیکن امانت گیس چوری بند نہیں کرنا چاہتا تھا۔25دسمبر کو محمد جمیل اپنی دکان میں بیٹھا ہوا تھاکہ امانت علی اپنے دو نامعلوم ساتھیوں کے ساتھ آیا اور اس کو گولیاں مار کر قتل کر دیا۔گزشتہ روز پولیس نے مقتول کی نعش کو پوسٹ مارٹم کی کارروائی مکمل کر کے ورثا کے حوالے کر دیا جسے بعد ازاں سینکڑوں سوگواروں کی موجودگی میں شاہدرہ کے آبائی قبرستان میں سپرد خاک کر دیا گیا۔پولیس نے ملزمان کے خلاف مقدمہ نمبر 1858درج کر کے کارروائی کا آغاز کر دیا ہے۔لیکن تاہم کوئی ملزم گرفتار نہیں ہو سکا۔

مزید : علاقائی