گیس بحران جاری شہری سراپا احتجاج بنے رہے ،حکومت کے خلاف نعرے بازی

گیس بحران جاری شہری سراپا احتجاج بنے رہے ،حکومت کے خلاف نعرے بازی

          لاہور ( جنرل رپورٹر) صوبائی دارالحکومت کے 80 فیصد سے زائد علاقوں میں سوئی گیس کی بندش کا بحران جاری رہا جس کے خلاف شہر کے مختلف علاقوں کے رہائشی دن بھر سراپا احتجاج بنے رہے۔ لوگوں نے کئی علاقوں میں سوئی گیس کی بندش کے خلاف سڑکیں بلاک کر دیں اور حکومت کے خلاف نعرے بازی کی۔ واضح رہے کہ شہر لاہور کے 80 فیصدعلاقوںمیں گزشتہ دو ہفتوں سے سوئی گیس بند ہے جن میں 20 فیصد علاقوں میں گیس رات گئے انتہائی لو پریشر کے ساتھ آتی ہے۔ بقایا 60 فیصد علاقوں کے رہائشیوں کے گھروں کے چولہے بجھ چکے ہیں جس کے خلاف گزشتہ روز شالا مار ٹاﺅن، مغل پورہ چوک، لال پل ، غازی آباد ، صدر گول چکر ، شاہدرہ کے علاقوں ،چونگی امر سدھو، والٹن روڈ، بیدیاں روڈ، مزنگ چوک، لارنس روڈ، ملتان روڈ پر شہری سڑکوں پر آ گئے۔ مظاہرین میں خواتین کی بڑی تعداد شامل تھی جنہوں نے کہا کہ دو ہفتوں سے سوئی گیس کی بندش سے غریب گھروں میں کھانا بھی نہیں پکا سکتے۔ اکثر اوقات کھانا تیار نہ ہونے سے بچے اور بڑے بھوکے سو جاتے ہیں۔ گھریلو بجٹ خراب ہو چکے ہیں۔ لکڑی کوئلہ اور ایل پی جی گیس خریدنے کی طاقت نہیں رکھتے۔ حکومت نے سوئی گیس کی فراہمی جلد بحال نہ کرائی تو ایوانوں کا گھیراﺅ کیاجائے گا۔

گیس بحران

مزید : علاقائی