ماہرین نے امریکہ کا جھوٹ بے نقاب کر دیا

ماہرین نے امریکہ کا جھوٹ بے نقاب کر دیا
ماہرین نے امریکہ کا جھوٹ بے نقاب کر دیا

  

نیویارک (نیوز ڈیسک) بین الاقوامی شہرت یافتہ الیکٹرانک کمپنی سونی کے کمپیوٹر نیٹ ورک پر ہونے والے سائبر اٹیک اور قیمتی ڈیٹا کی چوری نے ساری دنیا میں تہلکہ مچادیا اور امریکا نے اس پر سخت برہمی اور اشتعال کا اظہار کرتے ہوئے شمالی کوریا کو اس کا ذمہ دار قرار دیا۔ صدر باراک اوباما نے ایک پریس کانفرنس میں شمالی کوریا کو جوابی کارروائی کی دھمکی بھی دے ڈالی، مگر اب نامور آئی ٹی ماہرین اور مشہور زمانہ ہیکروں نے واضح کردیا ہے کہ امریکا جھوٹ بول رہا تھا کیونکہ یہ حملہ شمالی کوریا نے نہیں بلکہ کسی اپنے نے ہی کیا ہے اور اکثر ماہرین نے لینا نامی ایک خاتون کی طرف اشارہ بھی کردیا ہے۔

خواتین کو گلے لگا کر مشکلات حل کرنے والا جعلی عامل گرفتار

 دنیا کی صفحہ اول کی موبائل سیکیورٹی کمپنی Cloudflare کے پرنسپل سیکیورٹی ریسرچر مارک راجر نے معتبر جریدے ”ڈیلی بیسٹ“ کو بتایا کہ ایف بی آئی کا یہ دعویٰ درست نہیں کہ اس سائبر حملے کا تعلق پچھلے سائبر حملوں سے تھا جو کہ مبینہ طور پر شمالی کوریا کی طرف سے کئے گئے تھے۔ ان کا کہنا ہے کہ پچھلے حملوں کا بھی تعلق شمالی کوریا سے نہ تھا اور یہ کہنا کہ حملوں کیلئے شمالی کوریا کے IP ایڈریس استعمال ہوئے بے معنی ہے کیونکہ دنیا بھر کے ہیکر یہ IP ایڈریس استعمال کرتے ہیں اور یہ درجنوں ممالک کے ہیکروں کے استعمال میں ہیں۔ سائبر سیکیورٹی کمپنی Norse کے سینئر وائس پریذیڈنٹ کرٹ سٹیمبرجر کا بھی یہی کہنا ہے کہ ان حملوں کے پیچھے شمالی کوریا کا ہاتھ نہیں ہے۔ انہوں نے CBS نیوز سے بات کرتے ہوئے بتایا کہ ان کی کمپنی نے اپنے طور پر تحقیق کا فیصلہ کیا جس میں شمالی کوریا کا ہاتھ نظر نہیں آیا بلکہ سب شواہد لینا نامی ایک خاتون کی طرف اشارہ کرتے ہیں جو سونی کے کمپیوٹر نیٹ ورک سے گہری واقفیت رکھتی ہے۔ مشہور زمانہ ہیکر صابو کا بھی کہنا ہے کہ سونی کے نیٹ ورک کو شمالی کوریا ہیک نہیں کرسکتا کیونکہ وہ خود کئی مرتبہ سونی کو ہیک کرچکے ہیں اور اس نیٹ ورک کو جانتے ہیں اور یہ بھی جانتے ہیں کہ حالیہ حملہ شمالی کوریا کی طرف سے نہیں کیا گیا تھا۔ عالمی شہرت یافتہ ماہرین کے بیانات کے بعد امریکی حکومت کیلئے بہت پریشان کن صورتحال پیدا ہوگئی ہے اور اس بات پر غوروفکر کیا جارہا ہے کہ اب کیا موقف اختیار کیا جائے۔

مزید : بین الاقوامی