بھارت کے سر سے داؤد ابراہیم کا خوف نہ اترا، نئی خفیہ ریکارڈنگ نے اوسان خطا کردئیے

بھارت کے سر سے داؤد ابراہیم کا خوف نہ اترا، نئی خفیہ ریکارڈنگ نے اوسان خطا ...
بھارت کے سر سے داؤد ابراہیم کا خوف نہ اترا، نئی خفیہ ریکارڈنگ نے اوسان خطا کردئیے

  

نیو دہلی (مانیٹرنگ ڈیسک) بھارت کے سر پر مبینہ انڈر ورلڈ ڈان داﺅد ابراہیم کا بھوت ایسا سوار ہوا ہے کہ آئے روز کوئی ایسی کہانی سامنے آ جاتی ہے جو بھارتی حکام اور میڈیا میں ہلچل برپا کردیتی ہے۔ تازہ ترین انکشاف ایک فون کال کی صورت میں سامنے آیا ہے جس کے متعلق بھارتی میڈیا کا دعویٰ ہے کہ اس میں داﺅد ابراہیم اپنے کسی کاروباری ساتھی کے ساتھ محو گفتگو ہے اور ہمیشہ کی طرح یہ دعویٰ بھی کردیا گیا ہے کہ داﺅد ابراہیم کراچی میں بیٹھ کر اپنے عالمی نیٹ ورک کو کنٹرول کررہا ہے۔ اخبار ”ٹائمز آف انڈیا“ نے اپنی ویب سائٹ پر کال کی ریکارڈنگ اپ لوڈ کی ہے اور اخبار ”انڈیا ٹوڈے“ نے اس کال کے اقتباسات کا متن شائع کیا ہے۔ یہ دعویٰ بھی کیا گیا ہے کہ یہ کال ایک مغربی خفیہ ایجنسی نے سیٹلائٹ جاسوسی کے دوران ریکارڈ کی ہے جس میں داﺅد ابراہیم کسی یاسر نامی شخص سے مخاطب ہے اور دبئی انوسٹمنٹ پارک اور دبئی مرینا کے پراجیکٹس کے بارے میں مختصر گفتگو کے بعد بات کچھ یوں جاری رہتی ہے۔

” اگر 50 لاکھ سے ایک کروڑ تک کا کوئی چھوٹا موٹا کام ہو تو اس کے بارے میں بھی مجھے آگاہ کرو، اگر کوئی چالاکی کرے گا تو اسے بھی نہیں چھوڑا جائے گا، چاہے وہ جو بھی ہو۔“

” کوئی حصص فروخت نہیں کئے جائیں گے، یہ طے ہے، یہ میرا حکم ہے اور یہی میرا فیصلہ ہے۔“

” میں انہیں دبئی میں کوئی بھی بلڈنگ اپنی اجازت کے بغیر فروخت کرنے کی اجازت نہیں دوں گا۔“

” میں ہی جج ہوں، میں کسی عدالت میں نہیں جاﺅں گا، میں اپنے کیس کا جج خود ہی ہوں، میں کسی سے بے انصافی نہیں کرتا اور نہ ہی کسی کو اجازت دوں گا کہ وہ میرے ساتھ ایسا کرے، بات سمجھ میں آئی؟“

” تم جانتے ہو کہ میں نے اس صنعتکار کے ساتھ کیا کیا، اگر دوبارہ ایسا ہوا تو تم اپنے باپ کا منہ نہیں دیکھ سکو گے۔“

تاحال ایسی کوئی بات سامنے نہیں آسکی کہ جس سے یہ معلوم ہو سکے کہ اس کال کا تعلق داﺅد ابراہیم سے کیسے جوڑا گیا ہے۔

گفتگو کا کچھ حصہ قارئین سن بھی سکتے ہیں:

مزید : ڈیلی بائیٹس