صوبائی رارالحکومت میں ’’ونڈش‘‘ کی پابندی ہوا میں اڑ ا دری گئی ،ٹاؤنز انتظامیہ ماہانہ لینے میں مصروف

صوبائی رارالحکومت میں ’’ونڈش‘‘ کی پابندی ہوا میں اڑ ا دری گئی ،ٹاؤنز ...

لاہور(جاوید اقبال)صوبائی دارالحکومت میں شادی بیاہ کی تقریبات میں "ون ڈش "کی پابندی ہوا میں اڑا دی گئی ہے ۔ضلعی ٹاؤنوں کی انتظامیہ کی ملی بھگت سے شادی ہالز ،ہوٹلوں اور پارکوں میں ہونے والی شادیوں میں ون ڈش کی پابندی کا مذاق اڑانے کے ساتھ ساتھ شادی کی تقریبات کے لئے مقررہ کردہ اوقات کار کی خلاف ورزیاں بھی عروج کو پہنچ چکی ہیں ۔فارم ہاؤسز میں ہونے والی شادی بیاہ کی تقریبات 10بجے رات ختم ہونے کی بجائے رات دیر تک جاری وساری رہتی ہیں جس کی بنیادی وجہ یہ ہے کہ شادی آرڈیننس پر پابندی کرانے والے ٹاؤنوں کی انتظامیہ باقاعدہ طور پر شادی ہالز کی انتظامیہ سے ماہانہ لے رہی ہے جبکہ جہاں شادیوں کی خلاف ورزی پکڑی جاتی ہے وہاں مک مکا کے بعد معاملہ رفعہ دفعہ کردیا جاتا ہے ۔سب سے زیادہ خلاف ورزیاں گلبرک ٹاؤن، واہگہ ٹاؤن، راوی ٹاؤن ،اقبال ٹاؤن میں سامنے آرہی ہیں جہاں رات گئے تک شادی بیاہ کی تقریبا ت نہ صرف جاری رہتی ہیں بلکہ وہاں ون ڈش کی خلاف ورزی بھی معمول بن چکی ہے ۔تفصیلات کے مطابق ضلعی حکومت نے شہرمیں شادی بیاہ کی تقریبات کے لئے تقریبات ختم کرنے کا وقت رات10بجے ختم کررکھا ہے اور اس پر دفعہ 144بھی نافذ ہے جبکہ ہر شادی ہال ،ہوٹل مالکان اور ہر شہری پابند ہے کہ وہ بارات یا ولیمہ کی تقریب میں ون ڈش سے مہمانوں کی تواضع کرے مگر ٹاؤنوں کی انتظامیہ کی نااہلی سے یہ پابندیاں روزانہ اڑائی جارہی ہیں ،ہر شادی کی تقریب میں لائٹنگ کا بے دریغ استعمال ،فائرنگ، آتش بازی کے مظاہرے بھی دیکھنے کو مل رہے ہیں لیکن اس پر انتظامیہ نے آنکھیں بند کررکھی ہیں ۔اس حوالے سے ڈی سی او لاہور کیپٹن (ر) عثمان کا کہنا ہے کہ ایسی تقریبات پر باقاعدہ طور پر ضابطہ اخلاق بنایا گیا اور اس ٖپر قانون سازی بھی ہوچکی ہے جبکہ اس پر عمل درآمد کا ٹاسک ٹاؤنوں کے سپرد کیا گیا ہے اس پر سختی سے عمل درآمد کروائیں گے تاہم اس ضمن میں خفیہ مانیٹرننگ ٹیمیں تشکیل دیں گے جو خفیہ طور پر رات کے وقت مانیٹرننگ کریں گی اور جہاں بھی خلاف ورزی پکڑی گئی وہاں کے ٹی ایم او اور ٹی او آر کو نہ صرف معطل کیا جائے گا بلکہ اس کے خلاف مقدمہ بھی درج کروایا جائے گا۔

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...