معاملہ حل،حفیظ اور اظہر نے تربیتی کیمپ جوائن کر لیا ،شہر یار

معاملہ حل،حفیظ اور اظہر نے تربیتی کیمپ جوائن کر لیا ،شہر یار

لاہور( سپورٹس رپورٹر)قومی ون ڈے کرکٹ ٹیم کے کپتان اظہر علی اور محمد حفیظ کی چیئرمین پی سی بی سے ملاقات کے بعد انہوں نے محمد عامر کو کیمپ میں قبول کرلیا جبکہ چیئرمین پی سی بی شہر یار خان کا کہنا ہے کہ معاملہ حل ہوگیا ہے حفیظ اور اظہر علی تربیتی کیمپ میں شرکت کرینگے۔ دونوں نے پی سی بی کے چیئرمین شہر یار خان سے ملاقات کی تھی اور ان سے جمعہ کی صبح دس بجے تک کیمپ میں شرکت کرنے کے بارے میں اپنا جواب دینے کیلئے مہلت لی تھی اور پھر انہوں نے محمد عامر کے بارے میں پی سی بی کی پالیسی کو تسلیم کرلیا اور محمد عامر کو کیمپ میں قبول کرتے ہوئے اپنی کرکٹ جاری رکھنے کا فیصلہ کیا ۔محمد حفیظ کا کہنا تھا کہ وہ تمام کھلاڑی جنھوں نے ملکی ساکھ کو نقصان پہنچایا ان کو معاف کردیا ہے ۔میرے اصولی موقف کو میڈیا میں غلط پیش کیا گیا ، میرا ہدف ایک کھلاڑی نہیں تھا بلکہ جن کھلاڑیوں نے پاکستان کی ساتھ کو نقصان پہنچایا ان کو قومی ٹیم میں دوبارہ موقع نہیں ملنا چاہئے اور میں اس موقف پر قائم ہوں ۔محمد حفیظ نے کہاکہ چیئرمین پی سی بی سے ملاقات کے بعد انہوں نے پی سی بی کی پالیسی کو تسلیم کیا ہے اور ہمارے تحٖفظات کو اب چیئرمین پی سی بی دیکھیں گے۔چیئر مین پی سی بی کے ساتھ نجم سیٹھی کی موجودگی میں ملاقات ہوئی اور چیئرمین نے ہمارے تحفظات کو دور کرنے کی یقین دہانی کروائی ہے۔ کوشش کریں گے کہ تمام کھلاڑی مل کر پاکستان کے لئے کام کریں ۔انہوں نے کہاکہ کسی کو بتانے کی ضرورت نہیں کہ مجھ میں کتنی صلاحیتیں ہیں ۔کرکٹ کھیلنا میرا جنون ہے اور جب تک کرکٹ کھیلوں گا میری کوشش ہوگی کہ پوری ایمانداری کے ساتھ قومی کرکٹ ٹیم کی جیت کے لئے اپنی صلاحیتوں کو بروئے کار لاؤں۔بعد ازاں پی سی بی کے چیئرمین شہر یار خان نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ دونوں کھلاڑیوں کے ساتھ غیر مشروط طور پر محمد عامر کے معاملہ کو حل کیا گیا ہے۔انہوں نے کہاکہ کھلاڑیوں کو بتادیا گیا تھا کہ پی سی بی کی پالیسی کے تحت محمد عامر کو کیمپ میں شامل کیا گیا ہے اور کھلاڑیوں کا کہنا تھا کہ انہیں بورڈ کی پالیسی سے اختلاف نہیں ہے اور انہیں اس معاملہ میں ذاتی تحفظات ہیں ۔چیئرمین پی سی بی نے کہاکہ محمد حفیظ اور اظہر علی کو ملاقات میں بتا دیا تھا کہ اگر کھلاڑیوں نے بورڈ کی پالیسی سے اختلاف کیا تو ان کے خلاف ڈسپلنری ایکشن لیا جائے گا۔پی سی بی کے چیئرمین نے کہا کہ تمام کھلاڑیوں کو بتایا گیا ہے کہ محمد عامر کو مشکوک نظروں سے نہ دیکھیں اور انہیں ساتھ لے کر چلیں ۔ٹیم کے کپتان اور سینئر کھلاڑیوں کو خاص طور پر محمد عامر کا خیال رکھنا چاہئے ۔محمد عامر کو ابھی کیمپ میں شامل کیا گیا ہے اور اگر سلیکشن کمیٹی نے انہیں قومی ٹیم میں سلیکٹ کیا تو تمام کھلاڑیوں کو اس کی ہمت افزائی کرنی چاہئے دوسری طرف محمد عامر نے تمام کھلاڑیوں سے معافی مانگی ہے اور کہا ہے کہ اگر کھلاڑی انہیں کیمپ میں نہیں رکھنا چاہتے تو وہ کیمپ چھوڑنے کے لئے تیار ہیں ذر ائع نے بتایا ہے کہ محمد حفیظ اور اظہر علی کے علاوہ قومی ٹیم کے دیگر چار کھلاڑیوں عمر گل ،عمر کمل محمد رضوان اور وہاب ریاض کو بھی محمد عامر کے تحفظات تھے لیکن ان کے تحفظات کو بھی دور کرنے کی کوشش کی گئی ہے ۔

مزید : کھیل اور کھلاڑی


loading...