اپوزیشن جماعتوں نے مودی کے دورہ لاہور کو خوش آئند قرار دیدیا

اپوزیشن جماعتوں نے مودی کے دورہ لاہور کو خوش آئند قرار دیدیا

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک)اپوزیشن جماعتوں نے بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی کے دورہ لاہور کا خیر مقدم کرتے ہوئے دونوں ملکوں کے وزرائے اعظم کی ملاقات کو دوطرفہ تعلقات میں بہتری کا پیش خیمہ قرار دیا ہے پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئر مین بلاول بھٹو زرداری نے اپنے ٹوئیٹر پیغام میں کہا ہے کہ مسلل رابطے ہی تصفیہ طلب معاملات کے حل کا واحد راستہ ہیں۔غیر ملکی خبر رساں ادارے سے گفتگو کرتے ہوئے سابق وفاقی وزیر داخلہ اور قومی وطن پارٹی کے سربراہ آفتاب احمد خان شیر پاو191 نے کہا کہ تعلقات میں در آنے والی کشیدگی کو ختم کرنے کے لیے ایسے رابطوں کو جاری رکھنا چاہیے،ہم اپنے ہمسایوں کے ساتھ تعلقات اچھے رکھنا چاہتے ہیں اور ساتھ ہی ساتھ جامع مذاکرات میں جو سنگین معاملات ہیں اس پر بھی سنجیدگی کے ساتھ بات کرنے کی ضرورت ہے، اس لحاظ سے ہم سمجھتے ہیں کہ وزیراعظم مودی کی طرف سے دورہ لاہور ایک اچھا قدم تھا۔اْن کا کہنا تھا کہ ایسے روابط اعتماد سازی کے لیے دونوں ملکوں کے لئے مددد گار ثابت ہوتے ہیں،پاکستان تحریک انصاف کے سینیٹر شبلی فراز کہتے ہیں کہ دونوں ملکوں کے قائدین کو چاہیے کہ وہ کسی بھی واقعے کو تعلقات میں خلل کا باعث نہ بننے دینے کے لیے بھی کام کریں۔اْن کا کہنا تھا کہ ونوں ا طراف ایسے عناصر موجود ہیں جو کہ اس عمل کو آگے بڑھنے نہیں دینا چاہتے لہذا دونوں ممالک کوطے کرنا ہو گا کہ دہشت گردی سمیت کوئی بھی واردات ’’مسلسل مذاکرات ‘‘کے عمل کو پٹڑی سے نہیں اترنا چاہئے۔ سینیٹر شبلی فراز کا کہنا تھا کہ دونوں ممالک کے قائدین کو وراندیشی کے ساتھ اس عمل کو آگے بڑھانا ہے۔یاد رہے کہ پاک بھارت وزرائے اعظم کی حالیہ ملاقات کو عالمی سطح پر بھی سراہا جا رہا ہے ،اس سے قبل امریکہ ،چین اور اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل کی جانب سے بھی پاکستان اور بھارت کے درمیان بہتر ہوتے تعلقات کو خوش آئند قرار دیا جا چکا ہے

مزید : صفحہ اول


loading...