2015 عمران خان سمیت50 پارلیمنٹر ینز نے چپ کا روزہ توڑا

2015 عمران خان سمیت50 پارلیمنٹر ینز نے چپ کا روزہ توڑا

 اسلام آباد (آئی این پی)سال 2015 میں 50 اراکین قومی اسمبلی پارلیمنٹ میں ایک لفظ بھی نہ بولے، ان میں وہ پارلیمینٹرینز بھی شامل ہیں جنہوں نے پورا سال ایوان سے باہر ایک دوسرے پر تابڑ توڑ حملے کرنے میں ایک دن بھی ناغہ نہ کیا۔تفصیلات کے مطابق 2015ء کے دوران بڑے بڑے سیاستدانوں کی زبانوں پر تالے پڑے رہے، باہر جوہر خطابت دکھائے مگر ایوان میں چپ سادھے بیٹھے رہے، قانون سازی کا مطالبہ کیا، نہ عوامی مسائل پر آواز بلند کی۔ ان 50 سیاستدانوں میں سب سے بڑا نام ہے تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان کا جو چھ ماہ تک روٹھ کر ایوان سے باہر بیٹھے رہے، واپس لوٹے بھی تو ایک لفظ نہ بولے۔ ہر جلسے میں عمران خان کو للکارنے والے حمزہ شہباز بھی ایوان سے ناراض رہے تو سابق وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا امیر حیدر ہوتی نے بھی پورا سال چپ کا روزہ نہ توڑااور تو اور چوہدری پرویز الہٰی نے بھی سال بھر ایوان میں کچھ نہ کہا۔ پارلیمنٹ کی بالا دستی پر یقین رکھنے والی پیپلز پارٹی کی اہم ترین شخصیت فریال تالپور بھی سال بھر ایوان میں گونگے بن کر بیٹھے رہنے والے پارلیمنٹرینز میں شامل رہیں۔

پارلیمنٹیرینز

مزید : علاقائی


loading...