مہمند ایجنسی میں پہلی بار ایک ہفتہ پولیو مہم کا افتتاح

مہمند ایجنسی میں پہلی بار ایک ہفتہ پولیو مہم کا افتتاح

مہمند ایجنسی (نمائندہ پاکستان ) مہمند ایجنسی میں پہلی دفعہ پولیو سے بچاؤ کے حفاظتی ٹیکوں کے مہم کا افتتاح۔ 4 ماہ سے 23 ماہ تک 30100 بچوں کو حفاظتی ٹیکے لگوائے جائینگے۔ جبکہ 5 سال سے کم عمر کے تمام بچوں کو پولیو کے قطرے بھی پلائیں جائینگے۔ مہم کا باقاعدہ افتتاح ایجنسی ہیڈ کوارٹر ہسپتال غلنئی میں اسسٹنٹ پولیٹیکل ایجنٹ اپر مہمند حسیب الرحمن خلیل نے کیا اور پولیو کے خلاف واک میں بھی حصہ لیا۔ تفصیلات کے مطابق مہمند ایجنسی ہیڈ کوارٹر غلنئی میں پولیو سے بچاؤ کے ٹیکوں کا مہم کا افتتاح ہوا۔ مہم کا افتتاح اسسٹنٹ پولیٹیکل ایجنٹ اپر مہمند حسیب الرحمن خلیل نے کیا۔ اس موقع پر ایجنسی سرجن ڈاکٹر رضاء اللہ، ایم ایس ڈاکٹر محمد ریاض ، ڈاکٹر شاہد عالم، ایف ایس ایم او ڈاکٹر شبیر احمد، کمیونکیشن آفیسر محمد یونس کے علاوہ کثیر تعداد میں متعلقہ حکام اور لوگوں نے شرکت کی۔ اور پولیو کے خلاف واک بھی کیا گیا۔ اس موقع پر ایف ایس ایم او ڈاکٹر شبیر احمد نے بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ مہمند ایجنسی میں پہلی دفعہ حفاظتی ٹیکوں کا مہم چلا رہے ہیں۔ مہم کے دوران 4 ماہ سے 23 ماہ تک کے 30100 بچوں کو حفاظتی ٹیکے لگوائیں جائینگے۔ مہم 28 دسمبر سے 4 جنوری تک جاری رہیگا۔ مہم میں 82 اوٹ ریچ، 23 فیکسڈ اور 5 موبائل ٹیمیں حصہ لینگے۔ یہ ٹیمیں گاؤں گاؤں جا کر بچوں کو حفاظتی ٹیکے لگائینگے اور پانچ سال سے کم دوسرے بچوں کو پولیو سے بچاؤ کے قطرے پلائیں جائینگے۔ اس موقع پر اے پی اے اپر مہمند حسیب الرحمن نے والدین اور علاقے کے مشران پر زور دیا کہ مہم کے دوران پولیو ٹیموں سے تعاون کریں۔ اس کے علاوہ پولیٹیکل انتظامیہ نے مہم کے دوران مکمل سیکورٹی فراہم کرنے کا اعلان کیا۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر


loading...