دو سو روپے کیوں مانگے؟ دلہا نے باراتیوں کے ساتھ مل کر ٹیکسی ڈرائیور کو قتل کردیا

دو سو روپے کیوں مانگے؟ دلہا نے باراتیوں کے ساتھ مل کر ٹیکسی ڈرائیور کو قتل ...
دو سو روپے کیوں مانگے؟ دلہا نے باراتیوں کے ساتھ مل کر ٹیکسی ڈرائیور کو قتل کردیا

  


شیخوپورہ(مانیٹرنگ ڈیسک) دلہا اور باراتیوں نے 200 روپے کے تنازعہ پر غریب ٹیکسی ڈرائیور کو تشدد کا نشانہ بناکر موت کے گھاٹ اتار دیا۔

تفصیلات کے  مطابق محلہ رحمان پورہ سے احسان اللہ کی بارات کیلئے تین ہزارروپے کے عوض بارات کیلئے کار بک کرائی گئی لیکن دلہا کے والد نصراللہ نے ٹیکسی ڈرائیور کو صرف 28 سو روپے ادا کیے۔ ٹیکسی ڈرائیور افتخارکے 200 روپے کے تقاضہ کرنے پر دلہا اور باراتی طیش میں آگئے اور کہا کہ ہمارے مہمانوں کے سامنے ہماری بے عزتی کی گئی ہے جس پر وہ ٹیکسی ڈرائیور پر ٹوٹ پڑے اور لاتوں اور گھونسوں کی برسات کردی اور غریب ٹیکسی ڈرائیور کا گلا دبا کر اس کو ہلاک کردیا۔ واقعہ کی اطلاع ملنے پر ٹیکسی سٹینڈ ڈرائیور ایسوسی ایشن کے ارکان مشتعل ہوگئے اور ٹائر جلا کرلاہور، سرگودھا روڈ بلاک کردی۔ احتجاج کے بعد پولیس نے دلہا ، دلہے کا والد، چچا اور دیگر باراتیوں سمیت 8 افرادکے خلاف مقدمہ درج کرکے دلہا کے چچا  کو گرفتار کرلیا جبکہ دیگر ملزمان کی گرفتاری کیلئے چھاپے  مارے جارہے ہیں۔

مزید : شیخوپورہ


loading...