2015 میں امریکی پولیس نے ایک ہزار شہری ہلاک کردئیے

2015 میں امریکی پولیس نے ایک ہزار شہری ہلاک کردئیے
2015 میں امریکی پولیس نے ایک ہزار شہری ہلاک کردئیے

  


واشنگٹن(این این آئی)امریکی اخبار واشنگٹن پوسٹ کی رپورٹ کے مطابق 2015 میں پولیس کی جانب سے کی گئی فائرنگ کے نتیجے میں ہزار کے قریب شہری ہلاک ہوئے ہیں ۔واشنگٹن پوسٹ کی جانب سے کی گئی ایک اسٹڈی کے مطابق ان تمام واقعات میں جب کسی سفید فام پولیس اہلکار کی گولی سے کسی سیاہ فام کی جان گئی ان کی کل تعداد محض چار فیصد کے قریب ہے ۔امریکی آبادی میں سیاہ فام افراد کی کل تعداد چھ فیصد ہے تاہم پولیس کی فائرنگ سے ہلاک افراد میں ان کی کل تعداد چالیس فیصد بنتی ہے ۔مطالعے سے یہ بات بھی سامنے آئی کہ جو افراد پولیس کی فائرنگ کے نتیجے میں ہلاک ہوئے ان میں زیادہ تر یا تو مسلح تھے ۔ ان میں خودکشی کا رجحان یا وہ ذہنی طور پر غیر متوازن تھے یا پھرجب پولیس نے انہیںرکنے کا کہا اور انہوں نے فرار ہونے کی کوشش کی ۔واشنگٹن پوسٹ کی ریسرچ کے مطابق 2015 کے دوران جو لوگ پولیس فائرنگ سے ہلاک ہوئے ان میں سے 243 افراد ذہنی مسائل کا شکار تھے ¾ 75 ایسے تھے جن میں خودکشی کے رجحانات تھے اور 168 افراد ذہنی امراض کا شکار تھے ۔ہلاک ہونے والے ایسے افراد جو ذہنی مسائل کا شکار تھے ان میں دس میں سے نو افراد مسلح تھے، تاہم اسٹڈی سے یہ بات بھی سامنے آئی کہ جن پولیس اہلکاروں نے انہیں نشانہ بنایا وہ اس طرح کے ذہنی مسائل کا شکار افراد سے نمٹنے کی تربیت نہیں رکھتے تھے ۔رپورٹ کے مطابق ان تمام کیسز میں سے ایک چوتھائی ایسے ہیں جب پولیس کو ملزم کا پیدل یا کار کے ذریعے پیچھا کرنا پڑا اور پھر مقابلے کے بعد ملزم مارا گیا۔

مزید : بین الاقوامی


loading...