بجلی کی لوڈشیڈنگ ، بلنگ ، نیٹ میٹرنگ و دیگر معلومات کیلئے موبائل ایپلی کیشن متعارف

بجلی کی لوڈشیڈنگ ، بلنگ ، نیٹ میٹرنگ و دیگر معلومات کیلئے موبائل ایپلی کیشن ...

 اسلام آباد (اے پی پی) وزارت توانائی (پاور ڈویژن) نے بجلی کی تقسیم، ترسیل، لوڈ شیڈنگ و بلنگ کی صورتحال، نیٹ میٹرنگ اور دیگرمعلومات آن لائن حاصل کرنے کیلئے’’روشن پاکستان‘‘ کے نام سے موبائل ایپلیکیشن کا اجراء کردیا ہے جبکہ وفاقی وزیر پاورڈویژن سردار اویس احمد خان لغاری نے کہا ہے کہ حکومت نے بجلی کی لوڈ شیڈنگ پرقابو پانے اور پیداوار میں اضافے کا وعدہ پورا کردیا ہے، واجبات کی وصولی اور بجلی کی چوری کی روک تھام کیلئے اقدامات کررہے ہیں، لائن لاسز کے اعدادوشمار بھی موبائل ایپلیکیشن کے ذریعہ حاصل ہوسکیں گے ، نئے سسٹم سے صارفین ڈسٹر ی بیوشن کمپنیوں کی کارکردگی اور اپنے فیڈر سے بجلی کی فراہمی کا جائزہ خود لے سکیں گے، افسران کو صارفین کے سامنے جوابدہ بنائیں گے۔ منگل کو وزارت پاور ڈویژن میں ایک پریس کانفرنس کے دوران سردار اویس احمد خان لغاری نے موبائل ایپلیکیشن کا اجراء کیا۔ اس موقع پر پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ سوشل میڈیا پر لوڈشیڈنگ کے حوالے سے بعض عناصر کی جانب سے حکومت کو بدنام کرنے کی کوشش کی جارہی ہے حالانکہ حکومت نے بجلی کی لوڈ شیڈنگ کا شیڈول چند ہفتے پہلے ہی دے دیا تھا اور بجلی کی پیداوار میں اضافے اور موبائل ایپلیکیشن کے اجراء کا اپنا وعدہ پورا کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ تمام موبائل کمپنیز کی مصدقہ معلومات کو عوام کے سامنے لارہے ہیں، موبائل ایپلی کیشن کا نام روشن پاکستان رکھا گیا ہے۔ صارفین ایپلی کیشن کے ذریعے اپنے بل کی معلومات حاصل کرسکیں گے۔ صارفین کو ڈسٹری بیوشن کمپنیوں اور متعلقہ اداروں کی کارکردگی‘ لوڈشیڈنگ اورلائن لاسز کے حوالے سے معلومات مل سکیں گی۔ ایپلی کیشن نیٹ میٹرنگ کے حوالے سے بھی مدد گار ثابت ہوگی۔ ایپلی کیشن سے فیڈرز پر بجلی کی پچھلے 24 گھنٹے کی صورتحال بھی معلوم کی جاسکے گی۔ ڈھائی کروڑ صارفین کسی بھی وقت ریفرنس نمبر سے مکمل ریکارڈ حاصل کرسکتے ہیں اور اس کے ذریعہ ہر آدمی تک ہمارے اداروں کی روزمرہ کی کارکردگی پہنچ سکے گی۔ انہوں نے کہاکہ نئے نظام کے ذریعے جو معلومات وفاقی وزیر اور وفاقی سیکرٹری کو مل رہی ہیں انہی تک اب عام صارفین کی بھی رسائی ہو گی۔ اوور بلنگ کے مسئلے کے حل کے لئے تین سال قید کا قانون قومی اسمبلی سے منظور ہو گیا ہے۔امید ہے کہ پارلیمنٹ سے یہ بل جلد منظور ہو جائے گا۔

مزید : کامرس