جاپان، مزدور یونینوں میں شامل ملازمین کی تعداد میں ریکارڈ کمی

جاپان، مزدور یونینوں میں شامل ملازمین کی تعداد میں ریکارڈ کمی

ٹوکیو (اے پی پی) جاپان میں کئے گئے ایک سرکاری سروے کے مطابق مزدور یونینوں میں شامل جاپانی کارکنوں کی شرح 17.1 فیصد کی کم ترین سطح پر پہنچ گئی ہے۔ جاپان کے خبررساں ادارے کے مطابق وزارت محنت کی جانب سے جاری کردہ اعلان میں کہا گیا ہے کہ رواں سال جون کے آخر تک 99 لاکھ 80 ہزار افراد یونینوں کے رکن ہیں۔یہ تعداد ایک سال قبل کے مقابلے میں 41 ہزار زائد ہے تاہم، کل وقتی ملازمین کی صرف 17.1 فیصد تعداد ہی یونینوں میں شامل ہے، جو گزشتہ سال سے 0.2 فیصد پوائنٹس کم ہے۔

یہ تعداد 1953ء سے اعداد و شمار رکھے جانے کے بعد سے کم ترین سطح ہے۔اس کے برعکس جز وقتی ملازمین کی یونینوں میں شامل ہونے والی تعداد 77 ہزار افراد کے اضافے کے بعد 12 لاکھ ہو گئی ہے۔ یہ تعداد تمام جز وقتی ملازمین کا 7.9 فیصد اور یونینوں میں شامل تمام ملازمین کا 12.2 فیصد ہیں۔وزارت محنت کے مطابق مستقل ملازمین کی تعداد میں آنے والی کمی اس رجحان کی ایک بڑی وجہ ہے جبکہ غیر مستقل ملازمین کی پہلے سے زیادہ تعداد کام کے حالات بہتر کرنے کے لیے مزدور یونینوں میں شامل ہو رہی ہے۔

taa/jav/msb 1258

مزید : کامرس