ای پورٹل کے ذریعے ایس ایم ای سیکٹرکی برآمدات کئی گنابڑھ سکتی ہیں

ای پورٹل کے ذریعے ایس ایم ای سیکٹرکی برآمدات کئی گنابڑھ سکتی ہیں

فیصل آباد( بیورورپورٹ) ای پورٹل کے ذریعے فیصل آباد کے ایس ایم ای سیکٹرکی برآمدات کوچند سالوں میں ہی کئی گنا بڑھایا جا سکتا ہے۔ یہ بات علی باباڈاٹ کام کے بزنس ڈویلپمنٹ ڈائریکٹر مسٹر مارٹن وانگ نے فیصل آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری میں ایک آگاہی سیشن سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔ انہوں نے کہا کہ اس وقت دنیا بھر میں ای کامرس تیزی سے پھیل رہی ہے کیونکہ اس کیلئے نہ تو بڑے دفاتر اور نہ ہی سٹور قائم کرنے پڑتے ہیں بلکہ براہ راست تیارمال کو خریدار تک پہنچایا جا سکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اب تھری جی اور فور جی ٹیکنالوجی کی وجہ سے سمارٹ فون کے ذریعے ہر قسم کی آن لائن خریداری کی جا سکتی ہے اور توقع ہے کہ 2020 ء تک ای کامرس کے ذریعے تجارت کا حجم بڑھ کر 4.4 ٹریلین ہو جائیگا جو اس وقت صرف 1.86 ٹریلین ڈالرہے۔ انہوں نے کہا کہ فیصل آباد چھوٹے اور درمیانہ درجہ کی صنعتوں اور کاروباری اداروں کا گڑھ ہے جو اپنے محدود وسائل کی وجہ سے بڑی عالمی منڈیوں تک رسائی نہیں رکھتے تاہم وہ علی بابا کے ای پورٹل کے ذریعے دنیا کے 190 ملکوں کے 260 ملین خریداروں تک رسائی حاصل کر سکتے ہیں۔ انہوں نے علی بابا ڈاٹ کام کے بارے میں تفصیلی معلومات دیں اور اس بارے میں ایک دستاویزی فلم بھی دکھائی گئی۔ انہوں نے بتایا کہ اس وقت علی بابا کی 2 ملین آن لائن شاپس ، 16 ملین ملٹنی نیشنل کمپنیوں اور 40 ملین صنعتوں تک براہ راست رسائی ہے جس سے فیصل آباد کے ایس ایم ای سیکٹر کو بھی فائدہ اٹھانا چاہیئے ۔ انہوں نے بتایا کہ علی بابا کی ممبرشپ کے 2 طریقے ہیں ایک خریدار سے فروخت کنندہ تک رابطہ اور دوسرا سپلائرز پریمئر ممبرشپ جس کے ذریعے ہر قسم کا کاروبارآن لائن کیا جا سکتا ہے۔ ٹریڈ ڈویلپمنٹ اتھارٹی آف پاکستان کی پراڈکٹ ڈویلپمنٹ ڈویژن ٹو کی ڈائریکٹر جنرل محترمہ شازیہ اکرم نے کہا کہ پاکستان کے ایس ایم ای سیکٹر کو براہ راست بین الاقوامی مارکیٹوں سے منسلک کرنے کیلئے ٹی ڈیپ نے علی باباڈاٹ کام کے ساتھ ایک مفاہمتی یاد داشت پر دستخط کئے ہیں ۔

جس کا مقصد پاکستان کے ایس ایم ای سیکٹر کیلئے دنیا بھر کی پوٹینشل مارکیٹوں کو کھولنا ہے۔

مزید : کامرس