صاف پانی کیلئے کئی محکمے بنے لیکن کارکردگی مایوس کن ہے، مہرین راجہ

صاف پانی کیلئے کئی محکمے بنے لیکن کارکردگی مایوس کن ہے، مہرین راجہ

لاہور( لیڈی رپورٹر )سابق وزیر مملکت انصاف و پارلیمانی امور مہرین انور راجہ نے کہا ہے کہ ساڑھے چا ر سالوں میں عوام کو صاف پانی کی فراہمی نہ ہوسکی ،عوام آلودہ پانی پینے سے بیمار ہورہے ہیں ، صاف پانی کی فراہمی کے لئے کئی محکمے بنائے گئے لیکن ان کی کارکردگی مایوس کن ہے ،ایک بیان میں انہوں نے کہاکہکہ ملک میں واٹر پالیسی ہی نہیں، عوام کو صاف پانی کیسے میسر آ سکتا ہے، پنجاب میں ہر سال 23ہزار افراد ہیپاٹائٹس سی کی وجہ سے زندگی کی بازی ہار جاتے ہیں، پنجاب کے مختلف شہر مثلا لاہور، اسلام آباد، بہاولپور، فیصل آباد، گوجرانوالہ، قصور، گجرات، ملتان، لیہ، سرگودہا، سیالکوٹ سمیت بیشتر شہروں کے پانی میں آرسینک ہے لیکن حکومت نے اس پر کبھی توجہ دی اور نہ شہریوں کو صاف پانی کی فراہمی کو اپنی ترجیحات میں رکھا، یہی وجہ ہے پنجاب میں ہر سال 23ہزار افراد ہیپاٹائٹس سی سے موت کا شکارہوجاتے ہیں

مزید : میٹروپولیٹن 1