نواز شریف اپنی نام نہاد مقبولیت کی خوش فہمی سے باہر نکل آئیں،عبدالعلیم

نواز شریف اپنی نام نہاد مقبولیت کی خوش فہمی سے باہر نکل آئیں،عبدالعلیم

لاہور(نمائندہ خصوصی ) پاکستان تحریک انصاف سنٹرل پنجاب کے صدر عبدالعلیم خان نے کہا ہے کہ نواز شریف اپنی نام نہاد مقبولیت کی خوش فہمی اور نرگسیت سے باہر نکل آئیں،کرپشن کیسز نے ان کی پارٹی اوران کی سیاسی زندگی تباہ و برباد کر کے رکھ دی ہے، طے شدہ پروگرام کے تحت ناکام منصوبوں کو تخلیق کرنیوالوں کے کردار سے عوام خوب واقف ہو چکے ہیں، سرکاری خرچ پر سوشل میڈیا ٹیم کا پراپیگنڈہ کسی کام نہیں آئے گا ،عبدالعلیم خان نے چیئر مین سیکرٹریٹ میں کارکنوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ کرپٹ ٹبر کی اربوں کی لوٹ مار کے کیسز عدالتوں میں چل رہے ہیں،وہاں اپنی صفائی میں کچھ نہ کہہ پانے والے اداروں کیخلاف زبانیں چلا رہے ہیں، انہوں نے کہا کہ کرپشن سے معیشت کی بنیادیں کھوکھلی کرنے والے لچھے دار تقریروں سے نوجوان نسل کو بہکانے کی ناکام کوشش کررہے ہیں،سرکاری مشینری اور وسائل کا بے دریغ استعمال کرکے بنائی جانے والی سوشل میڈیا ٹیم سے نااہل نواز شریف اوران کی صاحبزادی کا خطاب صرف جھوٹ کا پلندہ تھا، عبدالعلیم خان نے کہا کہ کرپٹ ٹبر احتساب شروع ہونے پر گریہ وزاری کرکے خود کو مظلوم اور معصوم ثابت کرنے کی ناکام کوشش کررہا ہے، ماضی میں عدلیہ کا تقدس پامال کرنے والے اس بار پھر ہرزہ سرائی کرکے اپنی اصل شکل کے ساتھ عوام کے سامنے ہیں ۔ عبدالعلیم خان نے کہا کہ باپ بیٹی نے دل کی بھڑاس نکالنے میں کوئی کسر نہیں چھوڑی لیکن چوروں کے شور مچانے سے ان کا منطقی انجام ٹل نہیں سکتا، قومی خزانے کو لوٹا ہے حساب تو د ینا ہوگا،عوام کے حقوق پر ڈاکہ ڈال کر جمع کی جانے والے دولت قوم کو واپس کرنا ہوگی۔انہوں نے کہا کہ مخصوص ٹولے کے مفادات کیلئے ملکی صنعتوں کو تباہ وبرباد کرنے والوں نے نوجوانوں کو بے روزگاری کے سوا دیا ہی کیا ہے جو اب نئی نسل کا مستقبل سنوارنے کے جھوٹے خواب دکھا رہے ہیں، عبدالعلیم خان نے مزید کہا کہ خاندانی اور موروثی سیاست سے باہر نہ نکلنے والوں کو عوام کے جذبات سے کھیلتے ہوئے شرم آنی چاہیے،نوجوانوں کے مقبول ترین رہنما عمران خان اور ان کی جماعت پی ٹی آئی ہے،سرکاری خرچ پر جلسوں میں زندہ باد کے نعرے لگوانے والے نواز شریف کو آئندہ الیکشن میں اندازہ ہوجائے گا کہ عوام نہ صرف ان کے کرپٹ ٹبر بلکہ حواریوں اور درباریوں کوکس قدر نفرت کی نگاہ سے دیکھتے ہیں۔

مزید : میٹروپولیٹن 1