قائمہ کمیٹی قومی اسمبلی نے دفتر خارجہ کی کشمیر پالیسی کو ناکام قرار دیدیا ، دفتر خارجہ کا اظہار شرمندگی

قائمہ کمیٹی قومی اسمبلی نے دفتر خارجہ کی کشمیر پالیسی کو ناکام قرار دیدیا ، ...

اسلام آباد(صباح نیوز) قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی نے دفتر خارجہ کی کشمیر پالیسی کو ناکام قرار دے دیا جبکہ دفترخارجہ نے بھی شرمندگی کا اظہار کیا۔میڈیا رپورٹ کے مطابق پارلیمنٹ ہاؤس کے کمیٹی روم میں قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے انسانی حقوق کا 34 واں اجلاس چیئرمین بابر نواز خان کی زیرصدارت منعقد ہوا۔ کشمیر پالیسی کے حوالے سے حکومت کی جانب سے ڈائریکٹر کشمیر امور وزارت خارجہ شہراس عاصم نے کمیٹی کو بریفنگ دی۔ وزارت خارجہ کی جانب سے غیرتسلی بخش جوابات پر کمیٹی کے شرکا نے برہمی کا اظہار کرتے ہوئے دفترخارجہ کی کشمیر پالیسی کو ناکام قرار دے دیا۔ اراکین کمیٹی کا کہنا تھا کہ وزارت خارجہ مقبوضہ کشمیر میں جاری بھارتی مظالم اور دہشت گردی کو دنیا کے سامنے بہتر انداز میں اُجاگر نہیں کرسکی، افسوس کی بات ہے کہ ہربار 50 سال پرانا فلسفہ سنایا جاتا ہے۔ چیئرمین کمیٹی بابرنوازخان نے سوال کیا کہ اقوام متحدہ میں ملیحہ لودھی کی جانب سے کشمیر کا کہہ کر فلسطین کی تصاویر دکھائے جانے پر دفترخارجہ کا کیا موقف ہے؟۔ ڈائریکٹر کشمیر امور وزارت خارجہ نے جواب دیا کہ وہ واقعہ ایک ٹیکنیکل غلطی کی وجہ سے ہوا اور دفترخارجہ کو اس پر شرمندگی ہوئی ہے۔مختلف ممالک میں بسوں اور گاڑیوں پر بلوچستان سے متعلق پاکستان مخالف پوسٹرز کے حوالے سے بھارتی پروپیگنڈے کا معاملہ بھی اجلاس میں زیربحث آیا۔ دفترخارجہ حکام کا کہنا تھا کہ پاکستان نے دنیا بھر میں اپنے مشنز سے بھارت کے بلوچستان سے متعلق پروپیگنڈے کا توڑ کرنے کی تفصیلات طلب کرلی ہیں اور اس کا لائحہ عمل جلد ہی تیار کرلیا جائے گا۔

کشمیر پالیسی

مزید : علاقائی